.

’جاسٹا‘ کی مخالفت کرنے والا اکلوتا رکن کانگریس رکن کون؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی سینٹ کے بعد کانگریس کے ایوان نمائندگان کی واضح اکثریت نے بھی سعودی عرب کے خلاف ہرجانے کے متنازع بل’جاسٹا‘ پر صدر باراک اوباما کا ویٹو مسترد کر دیا ہے۔ایوان نمائندگان نے338 ارکان نے ویٹو کے خلاف ووٹ دیا جب کہ 74 ارکان نے ویٹو کی حمایت کی۔ یوں ایوان نمائندگان دو تہائی اکثریت کے ساتھ اس مسودہ قانون کوکانگریس میں قانون کا حصہ بنانے کی راہ ہموار کر گیا ہے۔ قبل ازیں سینٹ میں پیش کیے گئے بل پر صدر کے ویٹو کے خلاف 97 ارکان رائے دی جب کہ صرف ایک رکن کانگریس نے ویٹو کی حمایت اور ’جاسٹا بل‘ کی مخالفت کی تھی۔

سینٹ میں جاسٹا بل کی مخالفت کرنے والے اکلوتے رکن کانگریس ہیری ریڈ کا تعلق ڈیموکریٹک پارٹی سے ہے۔ وہ واحد امریکی سینٹر ہیں جنہوں نے اس متنازع قانون کی مخالفت میں ووٹ ڈالا۔

بل پر رائے شماری میں دو ارکان سینٹر ٹیم کین اور بیر سینڈر نے حصہ نہیں لیا۔ ان دونوں کا تعلق بھی ڈیموکریٹک پارٹی سے ہے۔ ٹیم کین صدارتی امیدوارہ ہیلری کلنٹن کے قریبی ساتھی سمجھے جاتے ہیں۔

ہیری ریڈ کون ہیں؟

امریکی سینٹرہیری ریڈ جنہوں نے سعودی عرب کے خلاف قانونی چارہ جوئی کے لیے پیش کردہ متنازعہ ’جاسٹا‘ قانون کی مخالفت کی، کا آبائی تعلق ریاست نیفاڈا سے ہے۔ وہ ایوان نمائندگان میں ڈیموکریٹک پارٹی کے اقلیتی رکن ہیں۔

ہیری ریڈ کو سنہ 2005ء اور 2006ء میں ایوان نمائندگان میں اقلیتی ارکان کا سربراہ مقرر کیا گیا تھا۔ اس وقت کانگریس میں اکثریت ڈیموکریٹک پارٹی کی تھی۔

ریڈ نے اپنی سیاسی زندگی کا آغاز سنہ 1982ء میں کیا۔ سنہ 1987ء میں وہ پہلی بار ایوان نمائندگان کے رکن منتخب ہوئے۔ وہ کانگریس کی رولز اینڈ ایڈ منسٹریشن و انٹیلی جنس کمیٹیوں کے بھی رکن رہ چکے ہیں۔

ہیری ریڈ اسقاط حمل سے متعلق ایک خاص نقطہ نظررکھتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ صرف ہنگامی حالات، عصمت ریزی یا ماں کی زندگی کو خطرات لاحق ہونے کی صورت ہی میں اسقاط حمل کے قانون پرعمل درآمد کیا جانا چاہیے۔

وہ ہم جنس پرستی کے بھی سخت خلاف ہیں۔ ملک میں آتشیں اسلحہ کی کڑی نگرانی کا مطالبہ کرتے رہے ہیں۔ سنہ 2003ء میں انہوں نے عراق پرامریکی یلغار کی حمایت کی مگر بعد ازاں اپنا موقف تبدیل کرتے ہوئے کہا تھا کہ صدر بش کی موجودگی میں عراق جنگ بے سود ثابت ہوگی۔

مخالف سیاسی جماعت ری پبلیکن کی جانب سے بھی ہیری ریڈ کو ڈونلڈ ٹرمپ کی مخالفت کی بناء پر تنقید کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے۔ ری پبلیکن پارٹی نے ریڈ پر’اخلاقی بزدلی‘ کی پھبتی کسی تھی۔

ہیری ریڈ کانگریس کے ان ارکان میں شمار کیے جاتے ہیں جنہوں نے ایران کے جوہری پروگرام کے تسلسل کے باعث تہران کے تیل کی خریداری اور اقتصادی وتجارتی پابندیوں پابندیوں کا دائرہ وسیع کرنے کا مطالبہ کیا۔