.

’جاسٹا‘ بدترین قانون اور منظوری کانگریس کی غلطی ہے:ایرودان

متنازع قانون میں فوری ترمیم کی ضرورت پر زور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی کانگریس میں سعودی عرب کے خلاف دہشت گردی سے متاثرہ فراد کی جانب سے ہرجانے کے متنازع قانون کی منظوری پر عالمی رہ نماؤں کا رد عمل جاری ہے۔ ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن نے بھی متنازع امریکی قانون’جاسٹا‘ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے اس میں فوری ترمیم کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

غیرملکی خبر رساں اداروں کے مطابق ترک صدر رجب طیب ایردوآن نے استنبول میں پارلیمنٹ کے اجلاس سے خطاب میں امریکی کانگریس کی طرف سے منظور کردہ ’جاسٹا بل‘ کو بدترین اور امریکی کانگریس کی بہت بڑی غلطی قرار دیا۔

انہوں نے کہا کہ ’جاسٹا‘ جیسا متنازع قانون کسی شخص کی انفرادی کارروائی پر پوری ریاست کو مورد الزام ٹھہرانے کی ایک گھناؤنی کوشش ہے۔ کانگریس نے اس قانونی بل پر صدر کا ویٹو مسترد کر کے بہت بڑی غلطی کی ہے۔ ترکی کو توقع ہے کہ ’ جاسٹا‘ جیسے متنازع ایکٹ پر فوری نظرثانی کی جائے گی۔

خیال رہے کہ امریکی کانگریس کی جانب سے منظور کردہ قانونی بل’جاسٹا‘ پر عالمی برادری کی طرف سے شدید رد عمل سامنے آیا ہے۔ امریکی صدر باراک اوباما نے بھی کانگریس سے اس بل کی منظوری پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ جاسٹا کی منظوری سے امریکی سفارت کاروں کو عالمی سطح پر حاصل تحفظ خطرے میں پڑ سکتا ہے اور کسی بھی امریکی عہدیدار یا سفارت کار کے خلاف عالمی سطح پر قانونی کارروائی کی راہ ہموار ہو سکتی ہے۔

ترک صدر کی طرف سے یہ بیان ایک ایسے وقت میں جاری کیا گیا ہے گذشتہ روز انہوں نے سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن نایف سے ملاقات کی تھی۔