ایردوآن کا شمالی شام میں بفرزون کے منصوبے کا انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن نے شمالی شام کے پانچ ہزار کلومیٹر کے علاقے کی تطہیر کے منصوبے کا انکشاف کیا ہے۔ اس کا مقصد ایسا پر امن زون بنانا ہے جہاں ہوا بازی پر پابندی ہو۔ "روتانا" چینل کو دیے گئے ایک انٹرویو میں انہوں نے بتایا کہ ترکی شمالی شام میں دہشت گردی سے پاک علاقے کا اعلان کرنے کے لیے کوشاں ہے جہاں کے علاقے کے باسی واپس لوٹ آئیں اور ان ہی میں سے سکیورٹی فورس تشکیل دی جائے۔

اس سے قبل برطانوی روزنامے دی انڈیپنڈنٹ نے بتایا تھا کہ ترکی نے خفیہ مشنوں کے لیے اپنی اسپیشل فورسز میں سے ایک ہزار فوجی شام بھیجے ہیں۔

ترکی نے اسپیشل فورس کے علاوہ بکتر بند گاڑیاں اور جنگی طیارے بھی شام بھیجے ہیں جو شامی اپوزیشن کے ساتھ مل کر سرحد پر بفر زون قائم کرنے کے لیے کام کررہے ہیں۔

ترکی کُردوں کو سب سے بڑا خطرہ شمار کرتا ہے۔ اسی لیے اس نے شام میں امریکا کے حلیف کرد جنگجوؤں کو نشانہ بنانے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔

واشنگٹن کردوں کو نشانہ بنانے کے حوالے سے ترکی کو پہلے ہی خبردار کر چکا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں