سعودی عرب:تعلیمی اداروں میں موسیقی کی مشروط اجازت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی وزارت تعلیم نے اسکولوں اور دیگر تعلیمی اداروں میں قبائلی نوعیت کے نعروں کے فروغ اور ممنوعہ قصاید اور رنگوں کے استعمال کی سختی سے ممانعت کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ تعلیمی اداروں میں قومی نوعیت کی موسیقی کی مکمل اجازت ہے۔

العربیہ نیوز چینل سے بات کرتے ہوئے وزارت تعلیم کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر عبدالحمید المسعود نے کہا کہ ممنوعہ رنگوں اور ممنوعہ موسیقی کو تعلیمی اداروں میں فروغ دینے والوں کا محاسبہ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ایسے نعرے، قصاید، نظمیں اور موسیقی جس سے سعودی وطنیت اور قومیت کو تقویت ملے پر کوئی پابندی نہیں ہے۔

ایک سوال کے جواب میں ڈاکٹر المسعود کا کہنا تھا کہ ایسی موسیقی جس کے نتیجے میں طلباء میں حب الوطنی کا جذبہ پروان چڑھے اور ان کی تربیت میں معاون ثابت ہو اس پر کوئی پابندی نہیں ہے۔ ہم اس طرح کی موسیقی کی نہ صرف اجازت دیتے ہیں بلکہ اس کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں۔ ایسی کسی بھی محفل موسیقی میں تعلیمی ادارے کا اسٹاف شرکت کرسکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں