.

اسد رجیم سے وابستہ 10 شخصیات بلیک لسٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یورپی یونین کے رکن ممالک نے شام پر نئی اقتصادی پابندیاں عاید کرتے ہوئے صدر بشارالاسد کی مقرب 10 اہم شخصیات کو بلیک لسٹ کردیا ہے۔ بلیک لسٹ کی گئی شخصیات پر شام میں نہتے شہریوں کے قتل عام میں ملوث ہونے والے عہدیدار بھی شامل ہیں۔

یورپی یونین کی کونسل برائے خارجہ امور کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ کونسل کے 28 ممالک نے ایرانی فوج کے افسران سمیت اسد رجیم سے وابستہ 10 اہم شخصیات پر نئی اقتصادی پابندیاں عاید کی ہیں۔ ان نئی پابندیوں کے بعد شامی حکومت کی مقرب بلیک لسٹ کی گئی شخصیات کی تعداد 217 ہوگئی ہے۔ بلیک لسٹ کیے گئے شامی حکومت اور فوج کے عہدیداروں کو یورپی یونین کے ملکوں میں داخل ہونے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

خیال رہے کہ یورپی یونین کی جانب سے شام کی 207 شخصیات اور 69 تنظیموں پر پچھلے سال 27 مئی کو اقتصادی اور سفری پابندیاں عاید کی گئی تھیں۔

انفرادی نوعیت کی پابندیوں کے نتیجے میں مذکورہ شخصیات تیل سیکٹر سمیت کسی بھی شعبے میں یورپی یونین میں سرمایہ کاری کرنے کی صلاحیت سے محروم ہوگئی ہیں۔ اس کے علاوہ یورپی ملکوں میں ان تنظیموں اور شخصیات کے اثاثے بھی منجمد کردیے گئے ہیں جن سے استفادہ ان کے لیے اب ممکن نہیں رہا ہے۔

خیال رہے کہ لکسمبرگ میں 17 اکتوبر کو یورپی یونین کے 28 رکنی اجلاس میں شام پر پابندیوں کی نئی فہرست پیش کی گئی تھی۔ ان میں شامی حکومت اور فوج سے وابستہ شخصیات کو بلیک لسٹ کرنے کی تجاویز بھی شامل تھیں۔