.

امریکا میں سعودی طالب علم متشدد حملے میں قتل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کی ریاست ویسکونسن میں نامعلوم افراد کے قاتلانہ حملے میں شدید زخمی ایک سعودی طالب علم جان کی بازی ہار گیا ہے۔

چوبیس سالہ سعودی طالب علم حسین سعید النہدی کو وسکونسن اسٹاؤٹ یونیورسٹی کے کیمپس کی حدود میں تشدد کا نشانہ بنایا گیا تھا۔امریکی روزنامے فاکس 9 کی رپورٹ کے مطابق پولیس افسر جب جائے وقوعہ پر پہنچے تھے تو انھیں وہ بے ہوشی کی حالت میں ملا تھا اور اس کے منھ اور ناک سے خون بہ رہا تھا۔

وہ اس جامعہ میں 2015ء سے زیر تعلیم تھا اور وہ کاروباری انتظام میں اعلیٰ تعلیم حاصل کررہا تھا۔ یونیورسٹی کے چانسلر باب میئر نے ایک بیان میں مقتول کے سعودی عرب کے شہر بریدہ میں مقیم خاندان اور جامعہ میں اس کے دوستوں کے ساتھ اس کی ناگہانی موت پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔

فوری طور پر اس سعودی طالب علم پر حملے کے محرکات کا علم نہیں ہوسکا۔ پولیس اور چانسلر نے کیمپس کی حدود میں رہنے والے افراد سے کہا ہے کہ اگر ان میں سے کسی کے پاس النہدی پر قاتلانہ حملہ کرنے والوں کے بارے میں کوئی معلومات ہیں تو وہ حکام کو مطلع کریں۔