.

داعش تنظیم جرمن فوج میں سرائیت کے لیے کوشاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جرمنی نے اعلان کیا ہے کہ وہ مسلح افواج میں شدت پسند عناصر کی شمولیت کے حوالے سے تحقیقات کرنے کا ارادہ رکھتا ہے ، تحقیقات کا آغاز آئندہ برس سے ہوگا۔

جرمنی کا یہ فیصلہ 20 شدت پسندوں کے ملٹری انٹیلی جنس کی نظر میں آنے کے بعد کیا گیا ہے جو فوج کے مختلف اداروں میں کام کر رہے تھے۔

جرمن ذرائع ابلاغ کے مطابق انٹیلی جنس ادارہ اس طرح کے دیگر 60 مشتبہ افراد کی تحقیقات پر کام کر رہا ہے۔

دوسری جانب جرمن پارلیمنٹ ایک قانون وضع کرنے کے لیے کام کر رہا ہے جو انٹیلی جنس ادارے کو مشتبہ ارکان کے ساتھ تحقیقات کرنے کا اختیار دے گا۔

جرمن پارلیمنٹ کی یہ تمام تر کوشش "داعش" تنظیم کا راستہ روکنے کے لیے ہے۔ داعش اس وقت جرمن فوج میں سرائیت کرنے یا اس میں شامل اپنے ارکان کے داعش کے زیر کنٹرول علاقوں میں فرار سے قبل ان کے جدید تربیت حاصل کرنے کے واسطے کوشاں ہے۔