.

تیونس میں دہشت گردی کی خطرناک سازش ناکام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

تیونس کی پولیس نے ملک میں دہشت گردی اور تخریب کاری کی ایک بڑی سازش ناکام بنانے کا دعویٰ کیا ہے اور کہا ہے کہ دہشت گردی کی منصوبہ بندی کے الزام میں دہشت گردوں کا ایک گروپ پکڑا گیا ہے جواہم سیاسی اور صحافی رہ نماؤں کو قاتلانہ حملوں کو نشانہ بنانے اور دارالحکومت کے ایک تجارتی مرکز میں دھماکوں کی منصوبہ بندی کررہا تھا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق 14 نومبر کو جاری کردہ ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ پولیس نے 19 ے 25 سال کی عمر کے تین مردوں اور ایک خاتون کو حراست میں لیا ہے۔ یہ چاروں تیونس ہی کے شہری ہیں اور دارالحکومت تیونسیہ میں قیام پذیر تھے۔

پولیس کے بیان میں کہا گیا ہے کہ گرفتار کیے گئے چاروں دہشت فیس بک کے ذریعے ایک دوسرے سے رابطے میں تھے اور وہ انٹرنیٹ پر بم تیار کرنے کے طریقے تلاش کرتے پائے گئے ہیں۔ ان میں سے ایک ایک قبضٗے سے ایک پستول بھی برآمد ہوا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ گرفتار کیے گئے دہشت گرد شام اور لیبیا میں سرگرم دہشت گردوں کے اہل خانہ کے لیے فنڈز بھی جمع کررہے تھے۔