.

بھارت : مسافر ٹرین کے حادثے میں 120 افراد ہلاک

ریاست اتر پردیش میں اندور سے پٹنہ جانے والی ایکسپریس ٹرین پٹڑی سے اتر گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بھارت کی ریاست اتر پردیش میں ٹرین کے ایک بدترین حادثے میں ایک سو بیس افراد ہلاک اور کم سے کم دو سو زخمی ہوگئے ہیں۔

بھارتی حکام کے مطابق اتوار کو علی الصباح ایک ایکسپریس ٹرین پٹڑی سے اتر گئی جس سے اس کی بوگیاں آپس میں ٹکرا گئی ہیں۔پولیس کے ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل دلجیت سنگھ چودھری نے بتایا ہے کہ ''حادثے میں مرنے والوں کی تعداد ایک سو بیس ہوگئی ہے۔ڈیڑھ سو سے زیادہ افراد زخمی ہوئے ہیں اور انھیں قریبی اسپتالوں میں منتقل کردیا گیا ہے۔

انھوں نے مزید بتایا ہے کہ پٹنہ ،اندور ایکسپریس کی بوگیاں ایک دوسری سے ٹکرانے کے بعد بری طرح تباہ ہوگئی ہیں اور امدادی کارکنان اور رضا کار شام تک بوگیوں میں میں پھنسے ہوئے زخمی مسافروں کی تلاش میں تھے۔

ریلوے حکام کے مطابق مسافر ٹرین وسطی شہر اندور سے شمال مشرقی شہر پٹنہ جا رہی تھی اور اس کی چودہ بوگیاں پوکھران میں پٹڑی سے اتر گئی تھیں۔حادثہ ریاست اترپردیش میں کانپور شہر سے 65 کلومیٹر جنوب میں پیش آیا ہے۔

مقامی میڈیا کی رپورٹس کے مطابق ٹرین میں پورے پورے خاندان سوار تھے اور ان میں سے بعض شادیوں میں شرکت کے لیے آبائی شہر پٹنہ کو جارہے تھے۔ریلوے حکام کے مطابق پھنسے ہوئے مسافروں کو لانے کے لیے خصوصی ٹرینیں روانہ کردی گئی ہیں۔

بھارت کی شمالی وسطی ریلویز کے ترجمان وجے کمار نے کہا ہے کہ ٹریک کو مکمل طور پر کلیئر کرنے اور کام کی جلد سے جلد بحالی کے لیے کوشش کی جارہی ہے۔

بھارت کے وزیر ریلوے سوریش پربھو نے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ مسافر ٹرین کے پٹڑی سے اترنے کی فوری طور پر تحقیقات کی جائے گی اور ذمے داروں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی نے بھی ایک ٹویٹ میں حادثے میں انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔

مغربی بنگال میں سنہ 2010ء میں دو ٹرینوں کے تصادم کے بعد ریلوے کا یہ بدترین حادثہ ہے۔ تب ایک مسافر ریل گاڑی ایک مال گاڑی سے جا ٹکرائی تھی جس سے 146 افراد ہلاک اور دو سو سے زیادہ زخمی ہوگئے تھے۔

واضح رہے کہ بھارت میں دنیا کا چوتھا بڑے ریلوے نظام ہے اور روزانہ دو کروڑ سے زیادہ افراد اس کے ذریعے سفر کرتے ہیں لیکن یہ ریلوے نظام ازکار رفتہ ہوچکا ہے۔ اس کا تحفظ کے حوالے سے ریکارڈ بہت ہی خراب ہے اور ہر سال ہزاروں افراد ریلوے حادثات کا شکار ہوکر ہلاک ہوجاتے ہیں۔