.

یمن : 48 گھنٹے کے لیے جنگ بندی کسی توسیع کے بغیر ختم

حوثی باغیوں کی جانب سے دو روز میں جنگ بندی کی 500 سے زیادہ مرتبہ خلاف ورزیاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں حوثی شیعہ باغیوں کے خلاف جنگ آزما عرب اتحاد نے اڑتالیس گھنٹے کے لیے جنگ بندی کے سوموار کی دوپہر (گرینچ معیاری وقت 0900 بجے) سے خاتمے کا اعلان کردیا ہے۔

یمنی صدر عبد ربہ منصور ہادی کی قانونی حکومت کے حامی عرب اتحاد نے ہفتے کے روز دو دن کے لیے جنگ بندی کی تھی مگر حوثی شیعہ باغیوں کی جانب سے بڑے پیمانے پر خلاف ورزیوں کے بعد اس میں کوئی توسیع نہیں کی ہے۔

عرب اتحاد کے ترجمان میجر جنرل احمد العسیری نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ''جنگ بندی کا کوئی احترام نہیں کیا گیا ہے اور اس کی صرف خلاف ورزیاں ہی کی گئی ہیں''۔ انھوں نے کہا کہ جنگ بندی میں توسیع کا کوئی حکم جاری نہیں کیا گیا ہے۔

العربیہ نیوز چینل کی رپورٹ کے مطابق ایران کے حمایت یافتہ حوثی شیعہ باغیوں نے ہفتے کے روز جنگ بندی کے آغاز کے بعد سے اس کی پانچ سو سے زیادہ مرتبہ خلاف ورزیاں کی ہیں اور ان میں 80 فی صد یمن کے اندر کی گئی ہیں۔

انھوں نے اس کی وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ حوثی باغیوں نے فائربندی کے آغاز کے پہلے گھنٹے ہی میں خلاف ورزیاں شروع کردی تھیں۔عرب اتحاد نے یمن اور سعودی عرب کے دو جنوبی صوبوں نجران اور جازان میں جنگ بندی کا اعلان کیا تھا۔اس نے حوثیوں اور ان کے اتحادی جنگجوؤں پر فضائی حملے روک دیے تھے لیکن حوثی ملیشیا نے جنگی کارروائیاں جاری رکھی تھیں۔