.

ترکِ وطن پس منظر کی حامل خاتون اقوام متحدہ میں امریکا کی نئی سفیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کے نومنتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ریاست جنوبی کیرولینا کی گورنر نِکّی ہیلی کو اقوام متحدہ میں نئی امریکی سفیر متعیّن کرنے کے لیے منتخب کیا ہے۔ نِکّی ہیلی بھارت سے تعلق رکھنے والے تارک وطن والدین کی بیٹی ہیں اور بین الاقوامی سطح پر ان کا بہت تھوڑا تجربہ ہے۔

جنوبی کیرولینا کے ایک مقامی اخبار چارلسٹن کی رپورٹ کے مطابق چوالیس سالہ گورنر نے اس پیش کش کو قبول کر لیا ہے۔ مبصرین کے مطابق نِکّی ہیلی کا انتخاب ممکنہ طور پر ڈونلڈ ٹرمپ کے انتخابی مہم کے دوران تارکین وطن اور اقلیتوں کے بارے میں تند وتیز متعصبانہ بیانات کے ازالے کی ایک کوشش ہے۔وہ تارکین وطن کے علاوہ خواتین کے بارے میں بھی نازیبا کلمات ادا کرتے رہے ہیں۔

واضح رہے کہ گورنر نِکّی ہیلی نے ری پبلکن پارٹی کے صدارتی امیدوار کی نامزد گی کے لیے مہم کے دوران ڈونلڈ ٹرمپ کو انتہا پسند سفید فام سپرماشسٹوں کے خلاف توانا انداز میں آواز بلند نہ کرنے پر تنقید کا نشانہ بنایا تھا اور ان کی مذمت کی تھی۔انھوں نے گذشتہ سال ریاست جنوبی کیرولینا کے دارالحکومت سے کنفیڈریٹ جھنڈے کو ہٹانے کے لیے ایک بل پر دستخط کیے تھے۔ امریکا میں خانہ جنگی کے دور کا یہ جھنڈا جنوبی امریکا کی ایک علامت سمجھا جاتا ہے اور اس کو غلامی سے وابستہ کیا جاتا رہا ہے۔

نِکّی ری پبلکن پارٹی کے صدارتی امیدوار کی پرائمری نامزدگی کی مہم کے دوران ڈونلڈ ٹرمپ کے حریف امیدواروں کی حمایت کرتی رہی تھیں لیکن گذشتہ ماہ انھوں نے کہا تھا کہ وہ اپنے تحفظات کے باوجود ٹرمپ کو ووٹ دیں گی۔ ڈونلڈ ٹرمپ 20 جنوری کو ڈیمو کریٹک صدر براک اوباما کی جگہ صدارت کے منصب پر فائز ہوں گے۔