.

شام میں امریکا کے فضائی حملے میں القاعدہ کمانڈر ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزارت دفاع ’’پینٹا گون‘‘ کے ترجمان نے کہا ہے کہ امریکا کے ایک فضائی حملے میں چند روز قبل شام میں شدت پسند گروپ القاعدہ کا ایک اہم کمانڈر ہلاک ہوگیا ہے۔

امریکی وزارت دفاع کے ترجمان پیٹر کک نے گذشتہ روز واشنگٹن میں صحافیوں کو بتایا کہ امریکی فوج نے 18 نومبر کو شام میں سرمدا کے مقام پر ایک فضائی حملے میں القاعدہ کمانڈر ابو الافغان المصری کو نشانہ بنایا تھا۔ حکام نے القاعدہ کمانڈر کی ہلاکت کی تصدیق کردی ہے۔

پیٹر کک نے بتایا کہ ابو الافغان کا تعلق مصر سے ہے تاہم اس نے افغانستان میں القاعدہ میں شمولیت اختیار کی تھی۔ بعد ازاں وہ افغانستان سے شامل منتقل ہوگیا تھا۔

امریکی محکمہ دفاع کے ترجمان کا کہنا تھا کہ مقتول القاعدہ کمانڈر کے مغربی ایشیائی عسکریت پسند گروپوں کے ساتھ بھی روابط تھے۔ ان میں سے ایک گروپ امریکا اور افغانستان مں اتحادی فوج پر حملوں میں بھی ملوث رہی ہے۔

قبل ازیں 2 نومبر کو امریکی حکومت نے شام میں القاعدہ کے ایک سینیر کمانڈر حیدر کارکان کی ہلاکت کا دعویٰ کیا تھا جب کہ تین نومبرکو شام میں سرگرم النصرہ گروپ نے امریکی فضائی حملوں میں اپنے ایک جنگجو احمد سلامہ مبروک المعروف ابو فرج کی ہلاکت کی تصدیق کی تھی۔