.

شام میں 1000 ایرانی جنگجو ہلاک ہوچکے!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایران میں شہداء فاؤنڈیشن نامی ایک تنظیم کی طرف سے جاری کردہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ شام میں گذشتہ کچھ عرصے کے دوران 1000 ایرانی جنگجو باغیوں کے ہاتھوں مارے جا چکے ہیں۔

خبر رساں ایجنسی ’تسنیم‘ کے مطابق شہداء فاؤنڈیشن کے ایک عہدیدار محمد علی شہیدی نے پاسیج ملیشیا کے زیراہتمام ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شام میں ہمارے شہداء کی تعداد ایک ہزار سے بڑھ چکی ہے۔

شام میں ایرانی فوجیوں اور دیگر جنگجوؤں کی ہلاکتوں کی یہ تعداد ایک ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب حال ہی میں ایران میں تین فوجیوں اور دسیوں غیر سرکاری جنگجوؤں کی تدفین کی گئی ہے۔ شام میں ہلاک ہونے والے افغان جنگجوؤں پر مشتمل فاطمیون اور پاکستانیوں پرمشتمل ’زینبیون‘‘ ملیشیاؤں کے جنگجو حلب میں مارے گئے۔

ایران کے فارسی ذرائع ابلاغ کے مطابق سنہ 2011ء کے بعد سے شام میں جاری لڑائی کے دوران ایرانی پاسداران انقلاب کے 3000 اہلکار ہلاک ہوچکے ہیں۔ حالانکہ ایران کا دعویٰ ہے کہ اس کی فوج شام میں محاذ جنگ پر نہیں لڑ رہی ہے۔