.

حوثی ملیشیا کا سعودی شہر کی جانب چلایا گیا بیلسٹک میزائل تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی قیادت میں اتحادی فورسز نے یمن کے سرحدی علاقے سے حوثی ملیشیا کے سعودی شہر خمیس مشیط کی جانب چلائے گئے ایک بیلسٹک میزائل کو فضا ہی میں تباہ کردیا ہے۔

خمیس مشیط کے نواح میں سعودی عرب کا ایک بڑا فوجی فضائی اڈا ''شاہ خالد ائیربیس'' واقع ہے اور یہیں سے سعودی عرب کی قیادت میں اتحاد کے لڑاکا طیارے اڑ کر یمن میں حوثی شیعہ باغیوں اور سابق صدر علی عبداللہ صالح کے وفادار فوجیوں کے ٹھکانوں پر بمباری کررہے ہیں۔سعودی عرب نے یمن کے ساتھ واقع اپنے سرحدی علاقے میں بیلسٹک میزائلوں کو فضا ہی میں ناکارہ بنانے کے لیے پیٹریاٹ میزائل بیٹریز نصب کررکھی ہیں۔

العربیہ نیوز چینل کے نمائندے کی رپورٹ کے مطابق اس بیلسٹک میزائل سے ایک روز قبل جمعے کو حوثیوں نے سعودی عرب کے سرحدی گاؤں الطوال کی جانب گیارہ میزائل داغے تھے۔ تاہم ان سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا تھا۔

ان میزائل حملوں کے بعد سے اتحادی فورسز نے سرحد پار حوثی ملیشیا کے اہداف کی جانب گولہ باری جاری رکھی ہوئی ہے اور سعودی عرب کے جنوبی شہروں جازان اور ظہران کے نزدیک واقع یمن کے سرحدی علاقوں میں حوثی ملیشیا کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے۔

یمن میں جاری لڑائی کے دوران گذشتہ مہینوں میں بھی حوثی شیعہ باغی سعودی عرب کی سرحد کے ساتھ واقع جنوبی علاقوں میں متعدد مرتبہ بیلسٹک میزائل فائر کر چکے ہیں۔انھوں نے سعودی عرب کے سرحدی شہر نجران کی جانب متعدد مرتبہ کاتیوشا راکٹ بھی چلائے ہیں لیکن انھیں فضا ہی میں ناکارہ بنا دیا گیا تھا۔