.

سعودی عرب : میدانوں اور ریگ زاروں نے سفید چادر اوڑھ لی

بارشوں اور برف باری سے بعض علاقوں میں درجہ حرارت نقطہ انجماد سے نیچے چلا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے وسطی اور شمال مغربی علاقوں میں برف باری کا سلسلہ جاری ہے۔برف نے صحراؤں اور ریگ زاروں کو سفید تہوں سے ڈھانپ دیا ہے اور درجہ حرارت صفر سے نیچے چلا گیا ہے۔

وسطی شہر شقراء اور شمال مغربی شہر تبوک میں زمین پر برف کی تہیں جم چکی ہیں۔شمالی علاقے الجوف میں واقع قصبے طبرجل میں درجہ حرارت تین ڈگری سینٹی گریڈ تک گر گیا ہے اور شمالی صوبے القریات میں درجہ حرارت ایک ڈگری سینٹی گریڈ تک گر گیا ہے۔

بارشیں

سعودی عرب میں عام طور پر وسط اکتوبر تک تھوڑی بہت بارشیں ہوتی ہیں اور اس کے بعد بارشوں کا سلسلہ تھم جاتا ہے لیکن اس مرتبہ ہلکی اور درمیانی بارشوں کا سلسلہ ابھی تک جاری ہے۔جمعے کو سعودی عرب کے بعض علاقوں میں درمیاںی اور بعض میں شدید بارشیں ہوئی ہیں۔ بہت سے سعودیوں نے اپنے شہروں میں بارش کے مناظر کی تصاویر اور ویڈیو بنا کرسوشل میڈیا پر پوسٹ کی ہیں۔

جامعہ القصیم میں موسمیاتی سائنس کے پروفیسر عبداللہ المسند نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا ہے کہ اس ہفتے کے اختتام پر سعودی عرب کے تمام مغربی ،مشرقی اور وسطی علاقوں میں بارشیں متوقع ہیں۔انھوں نے بتایا کہ اس موسم میں یہ دوسری بارشیں ہیں،اگرچہ بارشوں کے موسم کو ختم ہوئے چالیس روز گزر چکے ہیں۔

سعودی عرب کے مشرقی علاقوں میں ہفتے کے روز بھی ہلکی اور درمیانے درجے کی بارشوں کا سلسلہ جاری رہا ہے۔ملیجہ شہر اور مشرقی صوبے النعيريہ میں درمیانی بارش ہوئی تھی۔ النعيريہ میں ٹریفک پولیس کے سربراہ فہد محمد الحقبانی نے ڈرائیوروں کو انتباہ کیا تھا کہ وہ بارش کے دوران گاڑیاں چلاتے ہوئے غیر معمولی احتیاط برتیں اور وادیوں میں خاص طور پر سیلاب کی صورت میں گاڑیاں چلانے سے گریز کریں۔