.

یمنی صدر کا عدن میں خودکش بم دھماکے کی تحقیقات کا حکم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کے صدر عبد ربہ منصور ہادی نے جنوبی شہر اور عارضی دارالحکومت عدن میں ہفتے کے روز ایک فوجی کیمپ میں تباہ کن خودکش بم دھماکے کی تحقیقات کے لیے کمیشن کے قیام کا حکم دیا ہے۔

صدر ہادی نے دہشت گردی کے اس واقعے کے بعد ایک بیان میں سکیورٹی تنصیبات کی نگرانی کے عمل کو موثر بنانے اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے درمیان مربوط تعاون کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

عدن کے شمال مشرق میں واقع علاقے خور مکسر میں گذشتہ روز الصولبان کے فوجی اڈے پر تباہ کن خودکش بم دھماکے میں اڑتالیس فوجی ہلاک اور کم سے کم تیس زخمی ہوگئے تھے۔

یمنی حکومت کے ذرائع نے اس امر کی تصدیق کی تھی کہ ایک حملہ آور بمبار نے خود کو دھماکے سے اڑایا تھا۔ سخت گیر جنگجو گروپ دولت اسلامیہ عراق وشام ( داعش) نے اس خودکش بم دھماکے کی ذمے داری قبول کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔اس کے بیان کے مطابق ایک نامعلوم حملہ آور نے کیمپ کے مرکزی دروازے پر اپنی تن خواہیں وصول کرنے کے لیے جمع فوجیوں کے درمیان خود کو دھماکے سے اڑایا تھا۔