ایران نواز بحرینی لیڈر کے بنک کھاتوں میں خطیر رقوم کا انکشاف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خلیجی ریاست بحرین میں بنک کھاتوں اور غیر ملکی رقوم کی لین دین کی مانیٹرنگ کرنے والے ادارے نے انکشاف کیا ہے کہ بحرین میں ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای کے مقرب خاص عیسیٰ قاسم کے بنک اکاؤنٹس میں خطیر رقوم رکھی گئی ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق بحرین میں قائم ایران کے ایک نجی بنک میں عیسیٰ قاسم کے چار بنک کھاتے ہیں جن میں مجموعی طور پر 53 لاکھ 28 ہزار دینار کی رقم منتقل کی گئی ہے۔ ان کھاتوں میں سے 19 لاکھ 61 ہزار دینار کی رقم نکالی گئی ہے جب کہ 33 لاکھ 67 ہزار دینار کی رقم بدستور موجود ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ حسین القصاب نامی ایک دوسرے ملزم نے عیسیٰ قاسم کی طرف سے جاری کردہ چیکوں پر 5 لاکھ 76 ہزار دینار کی رقم ان چاروں کھاتوں سے نکالی ہے۔

خیال رہے کہ عیسیٰ قاسم نامی شیعہ رہ نما پر الزام ہے کہ وہ ایران کی شہہ پر بحرین میں مذہبی منافرت پھیلانے کی سازشوں میں ملوث ہیں۔ انہی الزمات کے تحت بحرین کی عدالتوں نے عیسیٰ قاسم کی شہریت منسوخ کرنے کا بھی فیصلہ دے رکھا ہے۔ ان پر دوسرے ملکوں سے مدد لے کرغیر قانونی تنظیم تشکیل دینے اور بیرونی سازشوں کو آگے بڑھانے کے لیے ملک میں اشتعال پھیلانے اور قومی سلامتی کو نقصان پہنچانے کے الزامات عاید کیے گئے ہیں۔

ادھر بحرین کے ارکان پارلیمان نے حکومت سے تجویز پیش کی ہے کہ وہ نوجوانوں کو ایران، عراق، شام، لبنان اور یمن کے سفر سے روکے۔ پارلیمنٹ میں اس تجویز پر گذشتہ ہفتے بحث کی گئی تھی۔ آئندہ ہفتے بھی اس پر رائے شماری کرائی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں