سعودی عرب : عازمین ِ حج اور عمرہ کے لیے نئے قواعد وضوابط

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی وزارت حج اور عمرہ نے عازمین کے حقوق کے تحفظ کے لیے نئے قواعد وضوابط جاری کیے ہیں۔

وزارت کی ویب سائٹ پر جاری کردہ دستاویز کے مطابق نگران کمیٹیوں اور مواصلاتی مراکز کے ذریعے ہر طرح کی شکایات وصول کی جائیں گی اور اس طرح عازمین حج اور عمرہ کے حقوق کا تحفظ کیا جائے گا۔

وزارت کا کہنا ہے کہ وہ غیرملکی عازمین حج اور عمرہ کو مہیا کی جانے والی رہائش ،خوراک اور ٹرانسپورٹ کی خدمات کی نگرانی کرکے ان کے حقوق کے تحفظ کو بھی یقینی بناتی ہے۔اس ضمن میں معاہدوں میں دی گئی تصریحات پر عمل درآمد کاجائزہ لیا جاتا ہے اور حجاج یا عازمین عمرہ کی جانب سے موصول ہونے والی شکایات کو ایک خصوصی کمیٹی کو بھیجا جاتا ہے اور وہی خلاف ورزی کے مرتکبین کے خلاف سزا کا فیصلہ کرتی ہے۔

وزارت کا کہنا ہے کہ اگر کوئی حج سروس کمپنی غیر معیاری خدمات مہیا کرتی ہے تواس پر جرمانہ عاید کیا جائے گا،ایک سیزن یا اس سے زیادہ کے لیے اس کو کام سے روک دیا جائے گا یا اس کا لائسنس ہی منسوخ کردیا جائے گا۔

وزارت نے کہا ہے کہ عازمین حج اور عمرے کے حقوق میں ان کا تحفظ ، خدمات مہیا کرنے والی کمپنیوں کے معاہدے میں دی گئی شرائط وضوابط پر مکمل عمل درآمد کو یقینی بنایا جائے گا اورکمپنیوں سے اس امر کی مالی ضمانت لی جائے گی کہ وہ اپنے معاہدوں کی پاسداری کریں گی۔

وزارت ان کمپنیوں کی جانب سے عازمین حج اور عمرہ کو مہیا کی جانے والی خدمات کی خودنگرانی کرے گی اور تمام مقدس مقامات میں مہیا کی جانے والی رہائش ،ٹرانسپورٹ ،خوراک اور دیگر سہولتوں سے متعلق رپورٹس کا جائزہ لے گی۔اگر عازمین کے سفری ٹکٹ گم ہوجاتے ہیں تو ا ن کے لیے متبادل ٹکٹ کا بندوبست کرے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں