.

آستانہ بات چیت میں شرکت کی دعوت موصول نہیں ہوئی : اقوام متحدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ نے شام کے بحران کے حوالے سے آستانہ میں ہونے والی بات چیت میں شرکت کے کے سلسلے میں کسی بھی سرکاری دعوت کے موصول کی تردید کی ہے۔

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل کے سرکاری ترجمان اسٹیفن دوجیرک کے مطابق اگر سرکاری طور پر دعوت موصول نہ ہوئی تو اقوام متحدہ آستانہ کانفرنس میں شریک نہیں ہو گی۔ انہوں نے واضح کیا کہ تنظیم کو نہیں معلوم کہ اس کانفرنس کی دعوت کس کی جانب سے دی جا رہی ہے۔

اس سے قبل روسی سفارتی ذریعے نے بتایا تھا کہ شام کے حوالے سے مقررہ بات چیت قازقستان کے دارالحکومت آستانہ میں 23 جنوری کو منعقد ہوگی۔ ذریعے کے مطابق بات چیت میں شرکت کرنے والوں کے ناموں کی فہرست تیار کی جا رہی ہے۔

ادھر ترک وزیر خارجہ مولود چاوش اوگلو کی جانب سے کہا گیا تھا کہ 30 دسمبر سے شام میں نافذ العمل فائر بندی کے جاری رہنے کی صورت میں 23 جنوری کو آستانہ میں بات چیت ہو سکتی ہے۔ تاہم ساتھ ہی اوگلو نے خبردار کیا تھا کہ "فائر بندی کی مسلسل خلاف ورزیوں" سے یہ بات چیت خطرے میں پڑ سکتی ہے۔

دوسری جانب ترکی کے نائب وزیراعظم نعمان كورتولموش نے شام میں کُرد جماعتوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گرد جماعتیں مذاکرات میں ہر گز شریک نہیں ہوں گی۔