.

بھارتی فوجی کو چھٹی نہ دینے والے چار سینئر افسر قتل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بھارت کے ایک ایلیٹ سکیورٹی یونٹ سے تعلق رکھنے والے فوجی نے مبینہ طور پر چھٹی نہ ملنے پر اپنے چار سینئر افسروں کو فائرنگ کرکے قتل کر دیا ہے۔

بھارتی پولیس کے مطابق یہ واقعہ مشرقی ریاست بہار کے ضلع اورنگ آباد میں ایک تھرمل پاور پلانٹ کی بیرکوں میں پیش آیا ہے جہاں سنٹرل انڈسٹریل سکیورٹی فورس (سی آئی ایس ایف) کے ایک فوجی نے اپنے افسروں پر اندھا دھند فائرنگ کردی اور اس کے بعد اس نے فرار ہونے کی کوشش کی۔

اورنگ آباد پولیس کے سربراہ ستیہ پرکاش نے بتایا ہے کہ فائرنگ کے نتیجے میں تین فوجی افسر موقع پر ہی ہلاک ہوگئے جبکہ چوتھا اسپتال میں اپنے زخموں کی تاب نہ لا کر چل بسا ہے۔

انھوں نے بتایا ہے کہ فوجی نے بتیس گولیاں چلائی تھیں۔اس نے فائرنگ کے بعد جب بھاگنے کی کوشش کی تو اس کو اس کے ساتھیوں نے پکڑ لیا۔اس قاتل فوجی کے بارے میں شُبہ ہے کہ وہ کسی ذہنی عارضے میں مبتلا ہے۔ پرکاش کا کہنا ہے کہ بظاہر یہ واقعہ چھٹی نہ ملنے کا شاخسانہ لگتا ہے۔

چاروں مقتولین واقعے کے وقت غیر مسلح تھے اور وہ ڈیوٹی پر نہیں تھے۔سی آئی ایس ایف بھارت کی اہم سول اور سرکاری تنصیبات ،جوہری پلانٹس ،ہوائی اڈوں اور سرکاری عمارات کی حفاظت کے فرائض انجام دیتی ہے۔

واضح رہے کہ بھارت کی سکیورٹی فورسز میں ڈیوٹی کے طویل اوقات ،خراب حالات کار اور چھٹیاں نہ ملنے کی وجہ سے اس طرح کے تشدد یا فوجیوں کی خود کشیوں کے واقعات آئے دن پیش آتے رہتے ہیں۔

2014ء میں بھارت کے زیر انتظام مقبوضہ کشمیر میں ایک فوجی نے اپنے سینئر کی جانب سے چھٹی دینے سے انکار پر اپنے پانچ ساتھیوں کو فائرنگ کرکے ہلاک کردیا تھا اور پھر خود کو گولی مار لی تھی۔