استنبول:نائٹ کلب پر حملہ کرنے والا بیوی،بیٹی کو چھوڑ کر فرار ہوگیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ترکی میں حکام نے استنبول میں نئے سال کی پہلی رات ایک نائٹ کلب پر حملے سے تعلق کے الزام میں یغور نسل کے دو چینی باشندوں کو گرفتار کر لیا ہے۔

ترک روزنامے حریت نے پولیس کے حوالے سے بتایا ہے کہ رینا نائٹ کلب پر فائرنگ کے بعد حملہ آور استنبول میں کرائے پر لیے گئے اپنے گھر میں گیا تھا۔وہاں سے وہ اپنے بیٹے کو لے کر چلتا بنا تھا اور اپنی بیوی اور اٹھارہ ماہ کی بیٹی کو وہیں چھوڑ گیا تھا۔

اخبار نے لکھا ہے کہ پولیس نے ابو محمد حراسانی نامی اس حملہ آور کی بیوی کو 11 جنوری کو تفتیش کے لیے گرفتار کر لیا تھا۔اس کا کہنا ہے کہ اس کو اپنے خاوند کے داعش سے تعلق یا اس کی حملے کی سازش کے بارے میں کوئی علم نہیں تھا۔وہ حملے کی رات گھر آیا تھا اور اپنے چار سالہ بیٹے کو ساتھ لے کر اس کو خدا حافظ کہہ گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں