.

ٹرمپ.. ایک دن میں 10 کروڑ ڈالر کے اخراجات کا سبب ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا میں منتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بیس جنوری کو واشنگٹن میں منصب سنبھالنے کے حوالے سے ہونے والی تقریب پر سکیورٹی اقدامات کے اخراجات 10 کروڑ ڈالر سے تجاوز کر چکے ہیں.. اور توقع ہے کہ آنے والے دنوں میں اس رقم میں مزید اضافہ ہو جائے گا۔

امریکی سکیورٹی اداروں کے اندازے کے مطابق ملک کے 45 ویں صدر کے وہائٹ ہاؤس میں داخلے کے موقع پر ہونے والی اس عظیم الشان تقریب میں تقریبا 8 لاکھ افراد شریک ہوں گے۔ تاہم یہ تعداد باراک اوباما کے منصب صدارت سنبھالنے کی تقریب میں شریک افراد کی تعداد کے نصف سے بھی کم ہے۔ باراک اوباما کے لیے منعقدہ تقریب میں 18 لاکھ سے زیادہ افراد نے شرکت کی تھی جو امریکا کی تاریخ میں ایک ریکارڈ ہے۔

اگرچہ ٹرمپ کی تقریب میں شرکاء کی متوقع تعداد اوباما کی تقریب سے کہیں کم ہے تاہم تقریب کی سکیورٹی کے اخراجات سابقہ تقاریب کے مقابلے میں کہیں زیادہ ہے۔ امریکی اخبار "انٹرنیشنل بزنس ٹائم" کے مطابق ملک کے 12 سے زیادہ سکیورٹی ادارے اس وقت تقریب کے مقام کی سکیورٹی کو یقینی بنانے کے لیے شب و روز مصروف ہیں۔ تقریب سے ایک ہفتہ قبل تک سکیورٹی انتظامات پر خرچ ہونے والی مجموعی رقم 10 کروڑ ڈالر ہو چکی ہے۔ ٹرمپ کی سکیورٹی کے حوالے سے اتنے بھاری اخراجات کی ایک وجہ یہ نظر آتی ہے کہ منتخب صدر کے وہائٹ ہاؤس میں داخلے کے موقع پر امریکا میں 26 احتجاجی مظاہرے بھی منعقد ہوں گے۔ سکیورٹی اداروں کو توقع ہے کہ اس موقع پر 40 ہزار سے زیادہ امریکی ٹرمپ کے صدر منتخب ہونے کی مخالفت میں سڑکوں پر نکلیں گے۔

امریکی اخبار نے مقامی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ تقریب کے موقع پر واشنگٹن میں 3200 پولیس اہل کاروں کے علاوہ نیشنل گارڈز کے 8 ہزار ارکان متعین کیے جائیں گے جب کہ تقریبا 5 ہزار سکیورٹی اہل کار پورے وقت دارالحکومت واشنگٹن کی کڑی نگرانی کریں گے۔

امریکی ذمے داران کا کہنا ہے کہ سکیورٹی فورسز کے لیے تشویش کا اہم ترین پہلو کسی بھی دہشت گرد کارروائی کا امکان ہے جب کہ دوسرا پہلو یہ ہے کہ ٹرمپ کے خلاف احتجاج کا سلسلہ پر تشدد کارروائیوں ، جھڑپوں اور تخریب کاری میں تبدیل نہ ہو جائے۔

واضح رہے کہ آٹھ نومبر کو امریکی صدارتی انتخابات میں ڈونلڈ ٹرمپ کی کامیابی پر بہت سے حلقوں کو شدید دھچکا پہنچا تھا اور اس کے نتیجے میں امریکا میں احتجاج کی ایک لہر سامنے آئی تھی۔