.

ترکی میں صدارتی نظام کے نفاذ سے متعلق آئینی دفعہ منظور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ترکی کی پارلیمان آئینی اصلاحات کے مجوزہ پیکج کی منظوری کے قریب پہنچ گئی ہے۔اس کی منظوری کے بعد ملک میں صدارتی نظام کے نفاذ کی راہ ہموار ہوجائے گی۔

انقرہ میں پارلیمان کے رات گئے اجلاس کے دوران میں آئینی اصلاحات کے مجوزہ پیکج میں شامل ایک حتمی دفعہ کی منظوری دی ہے اور ارکان پارلیمان کی اکثریت نے اس کے حق میں ووٹ دیاہے۔

یہ دفعہ اور آئینی اصلاحات کا پیکج حکمراں جماعت آق نے پیش کیا ہے۔اب ارکان اس پیکج میں شامل تمام اٹھارہ دفعات کی منظوری دیں گے۔ان کے تحت ملکی آئین میں ترامیم کی جائیں گی اور صدر کے اختیارات بڑھا دیے جائیں گے۔

آئینی اصلاحات پر پارلیمان میں رائے شماری کے نتائج کی توثیق کے لیے ارکان دوسرے اور آخری مرحلے میں پھر ووٹ دیں گے۔اگر 550 اراکین میں سے کم سے کم 330 نے اصلاحات بل کے حق میں ووٹ دے دیا تو پھر اس پر قومی ریفرینڈم کا انعقاد کرایا جائے گا۔