.

فرانس:صدارتی امیدوار کا تھپڑوں سے استقبال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانسیسی ذرائع ابلاغ میں ایک نئی ویڈیو فوٹیج سامنے آئی ہے جس میں سابق وزیراعظم اور بائیں بازو کی جماعتوں کے صدارتی امیدوار ایمانول والس کو ایک تقریب کے دوران ایک نوجوان کی جانب سے تھپڑوں کا نشانہ بنانے کی کوشش کی مگر اس موقع پر ایک سیکیورٹی اہلکار نے نوجوان کو زمین پر گرا دیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ایک 18 سالہ نوجوان نے اخبار‘لوفیگارو‘ کو بتایا کہ یہ واقعہ حال ہی میں شمال مغربی فرانس کے شہر لامبال میں اس وقت پیش آیا جب سابق وزیراعظم بلدیہ کی عمارت میں انتخابی مہم کے سلسلے میں اپنے حامیوں سے ملنے جا رہے تھے۔ اس دوران اچانک ایک شخص سامنے آیا اور اس نے سابق وزیراعظم اور صدارتی امیدوار مانویل والس کے منہ پر تھپڑ مارنے کی کوشش کی مگر اس موقع پر ایک سیکیورٹی اہلکار نے حملہ آور سابق وزیراعظم کی طرف بڑھنے والے شخص کو نیچے گرا دیا۔

سابق وزیراعظم کی بھری بزم میں توہین کا یہ پہلا واقعہ نہیں۔ گذشتہ برس دسمبر میں صدارتی انتخابی مہم کے دوران اسٹراسبرگ شہر میں ان پر آٹا پھینکا گیا تھا۔ فرانس میں سامنے آئے والے رائے عامہ کےجائزوں کے مطابق مانویل فالس کو پہلے مرحلے میں شکست کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔