ایک سعودی نے مجھے اسلام سے متعارف کرایا : لنڈسے لوہان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مشہور امریکی اداکارہ لنڈسے لوہان نے ایک وڈیو کلپ میں اسلام کے ساتھ اپنی کہانی اور اس حوالے سے اپنے ایک سعودی دوست کے کردار کا ذکر کیا ہے۔

لنڈسے کے مطابق " لندن میں مقیم میرے ایک سعودی دوست نے مجھے قرآن کریم کا ہدیہ پیش کیا جو میں اپنے ساتھ نیویارک لے گئی۔ یہ سیکھنے کے حوالے سے ایک کُھلے دروازے کے مترادف تھا بالخصوص روحانیت کے لحاظ سے جو کہ میری شخصیت کی طبیعت ہے"۔

لنڈسے نے مزید کہا کہ " میں امریکا میں قرآن کا نسخہ لے کر سڑک پر چل رہی تھی کہ کچھ لوگوں نے مجھ پر حملہ کر دیا اور کہا کہ میں ایک بری انسان ہوں.. اور یہ سب صرف اس لیے کہ میں نے قرآن کا نسخہ تھاما ہوا تھا"۔ اُس نے کہا کہ " لندن واپس آ کر میں مسرور ہوں کیوں کہ مجھے اپنے ملک میں خطرہ ہو گیا تھا۔ لوگوں نے میرے ساتھ برا برتاؤ کیا کیوں کہ یہ (قرآن) میرا اعتقاد ہے اور میں اس پر ایمان لائی ہوں"۔

لنڈسے نے باور کرایا کہ " اب میں سوچ سکتی ہوں کہ مسلمانوں کے ساتھ روزانہ کیا معاملہ ہوتا ہوگا.. مجھے سمجھ آ گیا کہ وہ کتنی اذیت سے دوچار ہوتے ہیں.. میں خود اسی تجربے سے گزر چکی ہوں"۔

امریکی اداکارہ نے "انسٹاگرام" سے اپنی تمام تصاویر کو حذف کر دیا اور اپنے بارے میں معلومات کو انگریزی سے عربی زبان میں تبدیل کر لیا۔

30 سالہ لنڈسےنے اپنے کوائف میں "السلام عليكم" کی عبارت بھی تحریر کی ہے۔ یاد رہے کہ انسٹاگرام پر لنڈسے کے فالوورز کی تعداد 57 لاکھ ہے۔

سوشل میڈیا استعمال کرنے والوں اور متعلقہ حلقوں کا کہنا ہے کہ لنڈسے نے جو اقدامات کیے ہیں یہ اُس کے اسلام لے آنے کا اظہار ہے۔

ٹوئیٹر پر ایک خاتون نے تبصرہ کرتے ہوئے لکھا کہ " میں بہت خوش ہوں کیوں کہ لنڈسے نے اسلام قبول کر لیا ہے۔ اللہ اس کو ہدایت سے منور فرمائے اور اس کو مبارک کرے"۔

دوسری جانب لنڈسے لوہان نے انسٹاگرام پر اپنی تصاویر حذف کرنے اور ذاتی کوائف کی زبان عربی کر لینے کے حوالے سے کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔ امریکی اداکارہ نے گزشتہ برس اکتوبر میں شامی پناہ گزینوں سے ملاقات کے لیے ترکی کے دورے میں حجاب بھی پہنا تھا۔

امریکی اداکارہ کی سابقہ تصاویر میں وہ "قرآن کریم" تھامے ہوئے ہیں۔

لنڈسے لوہان نے کچھ عرصہ کئی ماہ مشرق وسطی بالخصوص دبئی میں گزارے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں