.

شام میں امریکی فضائی حملہ، القاعدہ کمانڈر ہلاک: پینٹاگان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

گذشتہ روز جاری ہونے والے بیان کے مطابق القاعدہ کمانڈر محمد حبیب بوسعدون التونسی تیونس کا شہری تھا۔ بوسعدون القاعدہ کے بیرون ملک بالخصوص مغربی ملکوں میں دہشت گرد کارروائیوں کا انتظام کرتا تھا۔ وہ شامی شہر ادلب میں جمعرات کے روز امریکی فضائی حملے میں ہلاک ہوا۔

پینٹاگان کے ترجمان پیٹر کک کے مطابق بو سعدون التونسی 17 جنوری کو شام کی ادلب گورنری میں کی جانے والی امریکی فضائیہ کی ایک کارروائی میں ہلاک ہوا۔ وہ القاعدہ کے بیرونی ممالک میں دہشت گرد حملوں کا انتظام کیا کرتا تھا۔ مسٹر کک نے مزید بتایا کہ التونسی ماضی میں متعدد مغربی ملکوں میں ہونے والی دہشت گرد کارروائیوں میں ملوث رہا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ محمد حبیب بو سعدون التونسی 2014 میں شام آیا۔ اس سے قبل وہ مشرقی یورپ سمیت مشرق وسطی کے متعدد ملکوں میں مقیم رہا جہاں اس کے انتہا پسندوں سے گہرے روابط رہے ہیں۔

درایں اثنا امریکی محکمہ دفاع نے 12 جنوری کو القاعدہ کے ایک اور انتہا پسند رہنما عبدالجلیل المسلمی کو ادلب ہی میں ایک فضائی کارروائی میں ہلاک کرنے کا دعوی کیا۔

پینٹاگان کے ترجمان پیٹر کک نے 5 جنوری کو اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ ہم شام میں القاعدہ کے خلاف اپنی کارروائیاں اس وقت تک جاری رکھیں گے جب تک وہاں سے القاعدہ کا مکمل طور پر خاتمہ نہیں ہو جاتا۔