ٹرمپ کے بیٹے کا نجی دورہ.. امریکی خزانے پر 1 لاکھ ڈالر کا بوجھ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکی انتظامیہ اور صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے کاروبار کے درمیان پراسرار تعلق کا ایک نیا اشاریہ سامنے آیا ہے۔ امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ کے مطابق ٹرمپ کے بیٹے ایرک ٹرمپ نے جنوری کے اوائل میں ذاتی کاروبار کے سلسلے میں یوراگوائے کا دورہ کیا۔ نجی نوعیت کے اس دورے نے امریکی ٹیکس دہندگان پر تقریبا 1 لاکھ ڈالر کا بوجھ ڈال دیا۔ ایرک کے دورے کا مقصد ڈونلڈ ٹرمپ آرگنائزیشن کا فروغ تھا اور یہ اخراجات صدر کے بیٹے کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے ضروری تھے۔

امریکی میڈیا تفصیل کے ساتھ اس واقعے کو منظر عام پر لا رہا ہے جس نے ثابت کر دیا ہے کہ امریکی انتظامیہ اور اپنے کاروباری معاملات کو مکمل طور پر علاحدہ رکھنے کے حوالے سے ٹرمپ کی جانب سے مزید فیصلوں اور اقدامات کی اشد ضرورت ہے۔

اس سے قبل ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی کمپنیوں کے انتظامی امور سے دست بردار ہو کر انہیں اپنے دونوں بیٹوں ایرک ٹرمپ اور ڈونلڈ ٹرمپ (جونیئر) کے حوالے کر دیا تھا۔ اس کے علاوہ ٹرمپ کے داماد جیرڈ کشنر کے صدر کا مشیر مقرر ہونے کے بعد ٹرمپ کی بیٹی ایوانکا ٹرمپ نے اپنی کمپنی کی انتظامیہ سے علاحدگی کا فیصلہ کیا تھا۔

یوراگوائے کے دو روزہ دورے میں ایرک ٹرمپ نے متعدد کاروباری شخصیات اور پراپرٹی کے میدان میں قدآور شخصیات سے ملاقات کی۔ اس دوران یوراگوائے کے ساحلوں پر پرتکلف ظہرانوں اور عشائیوں کا بھی اہتمام ہوا۔

ایرک کے دورے کے اخراجات جن کا بوجھ امریکی خزانے اور ٹیکس دہندگان نے برداشت کیا۔ ان اخراجات میں صدر کے بیٹے کی حفاظت پر مامور سیکرٹ سروس کے اہل کاروں کے قیام پر 88320 ڈالر خرچ ہوئے جب کہ یوراگوائے میں امریکی سفارت خانے کے اہل کاروں کی ایرک کے ساتھ موجودگی اور ان کی آمد ورفت پر 9510 ڈالر صرف ہوئے۔

واشنگٹن پوسٹ کے مطابق ایرک کے لیے ہوٹل میں بُک کرائے جانے والے کمروں کا بل امریکی وزارت خارجہ نے ادا کیا۔

ایرک ٹرمپ کی ترجمان نے بلوں میں سامنے آنے والے اعداد و شمار پر تبصرہ کرنے سے انکار کر دیا۔ اسی طرح وہائٹ ہاؤس کے ترجمان نے بھی اس موضوع پر بات کرنے سے منع کر دیا۔

واشنگٹن یونی ورسٹی میں قانون کی پروفیسر اور حکومتی اخلاقیات کے امور کی ماہر کیتھلین کلارک نے اس حوالے سے تبصرہ کرتے ہوئے باور کرایا کہ ایرک ٹرمپ کا دورہ اس پراسراریت اور ابہام کی واضح مثال ہے جو ابھی تک ٹرمپ خاندان کے اقتصادی مفادات اور سرگرمیوں کو حکومتی انتظامیہ کے ساتھ نتھی کیے ہوئے ہے۔ کلارک کے مطابق دورے میں نجی مفادات کو پورا کرنے کے واسطے عوامی وسائل کا استعمال کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں