حوثی باغیوں کےاہم کمانڈر کی لاش سعودی فوج کے قبضے میں

باغیوں کا کرنل یحییٰ الطیر کو دفن کرنے کا دعویٰ غلط ثابت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب میں سامنے آنے والی ایک ویڈیو فوٹیج میں یمن کے حوثی باغیوں کے ایک سینیر کمانڈر کرنل یحییٰ الطیر کو بھی ان لاشوں میں دکھایا گیا ہے جس کے بارے میں حوثی باغیوں کا کہنا ہے کہ وہ اسے یمن میں ایک قبرستان میں دفن کرچکے ہیں۔

العربیہ چینل کے مطابق حوثی کمانڈر یحییٰ الطیر کو حال ہی میں سرحدی دراندازی کی کوشش کے دوران جوابی کارروائی میں کئی دوسرے جنگجوؤں سمیت ہلاک کردیا گیا تھا۔ سعودی فوج نے مارے جانے والے حوثی باغیوں لاشیں قبضے میں لے لی تھیں۔ ان میں یحییٰ الطیر کی لاش بھی شامل ہے۔

دوسری جانب حوثی باغیوں نے دعویٰ کیا تھا کہ سعودی عرب کی سرحد پر ایک جھڑپ کے دوران ہلاک ہونے والے کمانڈر یحییٰ الطیر کو یمن کےایک قبرستان میں دفن کیا جا چکا ہے۔ مگر ویڈیو فویٹیج نے حوثیوں کے دعوے کو غلط ثابت کیا ہے۔

خیال رہے کہ حوثی گروپ میں شمولیت سے قبل یحیی الطیر مںحرف صدر علی عبداللہ صالح کی وفادار ری پبلیکن گارڈز میں رہ چکا ہے۔

یحییٰ الطیر کو حال ہی میں سعودی عرب میں دراندازی کی کوشش کے دوران جوابی فائرنگ کے دوران ہلاک کردیا گیا تھا۔ فوٹیج میں کسی کو یہ کہتے بھی سنا جاسکتا ہے کہ جس شخص کو حوثیوں نے یحییٰ الطیر قرار دے کردفن کیا ہے وہ اس کا والد ہوسکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں