.

کویت: ایران کی خلیج سے مذاکرات پر آمادگی کا خیرمقدم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کویت نے ایران کی خلیجی عرب ممالک کے ساتھ مذاکرات پر آمادگی کا خیر مقدم کیا ہے اور کہا ہے کہ اس قسم کی کسی بھی بات چیت سے یمن اور شام میں جاری خانہ جنگیوں کے خاتمے میں مدد مل سکتی ہے۔

یہ بات کویت کے نائب وزیر خارجہ خالد الجاراللہ نے ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف کے ایک بیان کے جواب میں کہی ہے جس میں انھوں نے کہا ہے کہ ان کا ملک خلیج تعاون کونسل ( جی سی سی) کے ساتھ مذاکرات کے لیے تیار ہے۔

خالد الجاراللہ نے بدھ کو کویت میں ایرانی سفارت خانے میں منعقدہ ایک تقریب میں کہا کہ ''ہم اسی بات کے منتظر ہیں۔اس طرح کے ڈائیلاگ سے خطے میں بہت سے معاملات میں کشیدگی کا خاتمہ کیا جاسکتا ہے اور یمن یا شام کے علاوہ خطے میں کہیں بھی کشیدگی کے خاتمے میں مدد مل سکتی ہے''۔

ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے گذشتہ روز ایک بیان میں جنوری میں امیرِ کویت شیخ صباح الاحمد الصباح کی جانب سے ایرانی صدر حسن روحانی کو بھیجے گئے ایک خط کا حوالہ دیتے ہوئے کہا تھا کہ تہران کو امید ہے کہ خلیجی ریاستیں متنازعہ امور کو حل کرنے کے لیے تیار ہوں گی۔

ایرانی اخبار اطلاعات کی رپورٹ کے مطابق وزیر خارجہ نے کہا کہ ''اس صورت میں ایران بھی تیار ہے۔ہم سب کو آگے بڑھنا چاہیے اور ہمیں ایک ایسے مستقبل پر متفق ہونا چاہیے جو ذرا مختلف نظر آئے''۔