ایرانی صدر خلیجی عرب ممالک سے اچھے تعلقات کے خواہاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایرانی صدر حسن روحانی نے کہا ہے کہ ان کا ملک خلیجی عرب ہمسایوں سے اچھے تعلقات کا خواہاں ہے۔انھوں نے یہ بات بدھ کو اومان اور کویت کے ایک روزہ دورے پر روانہ ہونے سے قبل کہی ہے۔

ایران کی سرکاری خبررساں ایجنسی ارنا کے مطابق حسن روحانی نے کہا کہ ''اسلامی جمہوریہ ایران کی ہمیشہ سے یہ پالیسی رہی ہے کہ ہمسایہ ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات استوار کیے جائیں اور خلیج فارس کی سکیورٹی کو برقرار رکھا جائے''۔

انھوں نے کہا کہ ''شیعوں اور سنیوں کے درمیان زیادہ اتحاد ہونا چاہیے کیونکہ وہ صدیوں سے ایک ساتھ اکٹھے رہتے چلے آ رہے ہیں''۔

واضح رہے کہ کویت کے وزیرخارجہ نے جنوری کے آخر میں تہران کا دورہ کیا تھا اور ایران اور اس کے علاقائی ہمسایوں کے درمیان آزادانہ ڈائیلاگ کی ضرورت پر زور دیا تھا۔

ایرانی صدر اومان کے سلطان قابوس سے مسقط میں ملاقات کرنے والے تھے۔اس کے بعد انھوں نے کویت جانا تھا جہاں وہ امیر شیخ صباح الاحمد الصباح سے ملاقات کرنے والے تھے۔

ایران اور خلیجی عرب ممالک کے درمیان یمن اور شام میں جاری تنازعات کے حوالے سے ایک دوسرے کے برعکس موقف رکھتے ہیں۔ایران شام میں صدر بشارالاسد اور یمن میں حوثی شیعہ باغیوں کی حمایت کررہا ہے جبکہ عرب ممالک شام میں اسد مخالف باغیوں اور یمن میں صدر عبد ربہ منصور ہادی کی بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ حکومت کی حمایت کررہے ہیں اور سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد حوثی شیعہ باغیوں کے خلاف فوجی کارروائی کررہا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں