.

امریکا: رابرٹ ہارورڈ نے قومی سلامتی کے مشیر کا منصب مسترد کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی میڈیا نے جمعرات کے روز بتایا ہے کہ وائس ایڈمرل روبرٹ ہارورڈ نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مشیر برائے قومی سلامتی کے منصب کو قبول کرنے سے معذرت کر لی۔

ہارورڈ ان لوگوں میں سے ہیں جن کا نام مائیکل فلن کی جاں نشینی کے لیے گردش میں ہے۔ مائیکل فلن کو ٹرمپ کے صدارتی منصب سنبھالنے سے قبل واشنگٹن میں روس کے ساتھ خفیہ تعلقات رکھنے کی پاداش میں اپنے عہدے سے مستعفی ہونا پڑا تھا۔

امریکی نشریاتی ادارے CNN پر نشر ہونے والے بیان میں ہارورڈ کا کہنا ہے کہ "یہ کام دن میں 24 گھنٹے اور ہفتے کے 7 روز مکمل توجہ کا تقاضہ کرتا ہے تاکہ اس کو صحیح طور انجام دیا جاسکے۔ میں فی الوقت اس پابندی اور پاسداری پر عمل پیرا نہیں ہو سکتا۔"

دوسری جانب امریکی صدر ٹرمپ نے جمعرات کے روز اس بات کی تردید کی ہے کہ وہ اپنی انتخابی مہم کے دوران روس کے ساتھ رابطے میں رہے۔ واضح رہے کہ حال ہی میں شائع ہونے والی اخباری رپورٹوں میں افشا ہونے والی معلومات کی بنیاد پر کہا گیا ہے کہ گزشتہ برس ٹرمپ کی ٹیم اور کریملن کے نزدیکی ذمے داران کے درمیان بارہا رابطے ہوئے۔