.

ایران کا سفر کرنے پر کھلاڑی کو امریکا داخلے سے روک دیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی حکام نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے حکم نامے پرعمل درآمد کرتے ہوئے مانچسٹر یونائیٹڈ کے سابق کھلاڑی ڈوائٹ یورک کو ایران کے دورے کی پاداش میں امریکا داخلے سے روک دیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق امریکی حکام کو شکایت ہے کہ مانچسٹر کے سابق کھلاڑی ڈوائیٹ یورک نے چندہ ماہ قبل ایران کا دورہ کیا جہاں انہوں نے تہران میں آزادی اسٹیڈیم میں ایرانی فٹ بال ٹیم اور عالمی ٹیموں کے درمیان ’دوستانہ‘ میچ میں حصہ لیا تھا۔

ایران میں اسپورٹس کی خبریں شائع کرنے والی ’ورزش سہ‘ نے اپنی رپورٹ میں ’پین سپورٹ‘‘ ٹی وی کے حوالے سے بتایا ہے کہ مانچسٹر یونائیٹڈ کے سابق فٹ بالر کو ایران کا سفر کرنے کے جرم میں امریکا میں داخل ہونےسے روک دیا گیا۔

خیال رہے کہ یورک امریکا کے سفر پر گذشتہ روز میامی شہر کے ایک ہوائی اڈے پر پہنچے تو انہیں بتایا گیا کہ وہ دوسرے کھلاڑیوں کی ایک ٹیم کے ہمراہ ایران کے سفر کی وجہ سے امریکا میں داخل نہیں ہوسکتے۔ امریکی حکام کی طرف سے یورک کو بتایا گیا کہ وہ چند ماہ قبل دوسرے فٹ بالروں لویز فیگو، مارسیل، دوسایی، فیٹور پایا، فابیو کانافارو اور فرنانڈوو ھیرو کے ہمراہ تہران دوستانہ میچ کھیلنے گئے تھے۔

حال ہی میں امریکی صدر ڈونلد ٹرمپ نےایران سمیت سات مسلمان ملکوں کے باشندوں کی عارضی طور پرامریکا میں داخلے پر پابندی عاید کردی تھی۔ امریکی صدر کا حکم نامہ امریکی عدالتوں کی طرف معطل ہونے کے باوجود سیکیورٹی حکام اس پر عمل درآمد کررہے ہیں۔