تہران میں سکیورٹی وجوہ کی بنا پرغیر مجاز ڈرون اڑانے پر پابندی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ایرانی فوج نے دارالحکومت تہران میں سکیورٹی وجوہ کی بنا پر غیرمجاز ڈرونز کے استعمال پر پابندی عاید کردی ہے۔

فوج نے یہ فیصلہ مشغلہ بازوں اور فلم سازوں کی جانب سے بغیر پائیلٹ چھوٹے طیارے اڑانے کے دوران پیش آنے والے ناخوشگوار واقعات کے پیش نظر کیا ہے۔

ایران کی مسلح افواج کے جنرل اسٹاف نے سوموار کو ایک حکم جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ دو وزارتوں میں سے ایک وزارت یا سرکاری نشریاتی ادارے کی جانب سے اجازت ملنے کی صورت ہی میں اب ڈرونز استعمال کیے جاسکیں گے۔

ایران کی نیم سرکاری خبررساں ایجنسی تسنیم کے مطابق پاسداران انقلاب کے ایک کمانڈر سید علی رضا ربیعی نے کہا ہے کہ ''تہران میں ذاتی اور پرائیویٹ ڈرونز اڑانے پر پابندی ہے''۔

واضح رہے کہ ایرانی سکیورٹی فورسز نے دسمبر میں صدر اور سپریم لیڈر کے دفاتر کی جانب بڑھنے والے ایک ڈرون کو مار گرایا تھا۔ بعد میں ایرانی میڈیا نے اطلاع دی تھی کہ اس چھوٹے بغیر پائیلٹ طیارے کے ذریعے ایک فلم ساز پارٹی دارالحکومت میں مناظر فلما رہی تھی اور اس کو ریڈ زون کی جانب بڑھنے پر مار گرایا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں