فٹبال میچ میں دنگا فساد کیس کا حتمی فیصلہ جاری

مصری اپیلٹ کورٹ نے 11 افراد کو سزائے موت سنا دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصر کی ایک اپیلٹ عدالت نے پورٹ سعید کے مقام پر 2012ء میں فٹبال میچ کے دوران ہنگامی آرائی کے دوران 70 سے زائد تماشائیوں کی ہلاکت کے مشہور مقدمہ میں ملوث 11 افراد کو سزائے سنا دی ہے۔

سن 2015 میں پورٹ سعید کی فوجداری عدالت نے الاھلی فٹبال کلب کے 72 حامیوں کے قتل عام کی پاداش میں 11 افراد کو سزائے موت سنائی تھی۔ مقدمے میں دس افراد کو عمر قید جبکہ 10 دیگر ملزمان کو قید بامشقت کا حکم سنایا گیا تھا۔ پورٹ سعید کے سیکیورٹی انچارج اور دیگر 12 اہلکاروں کو فوجداری عدالت نے پانچ برس قید سنائی تھی جبکہ 20 ملزمان کو بری کر دیا گیا تھا۔

مصری استغاثہ نے ملزمان کے خلاف قتل عمد کی سوچی سمجھی سازش تیار کرنے کا مقدمہ قائم کیا تھا۔ اس کارروائی میں قتل کے علاوہ چوری، ڈاکا زنی، کرائے کے قاتلوں کے ذریعے تخریب کاری جیسی وارداتیں کرنے کا الزام عائد کیا گیا تھا۔

نیز ملزمان پر الزام تھا کہ الاھلی فٹبال کلب کے بعض حامیوں نے الٹرا نامی فٹبال کلب کے حامیوں کو ماضی کی بعض ناراضی کا بہانہ بنا کر قتل کیا۔ الاھلی فٹبال کلب کے حامیوں نے الٹرا کلب کے شائقین کو اسلحہ کے زور ڈرایا دھمکایا اور انہیں تشدد کا نشانہ بنایا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں