آسکر تقسیم کرنے والے بھی خطا کے پتلے نکلے، جانئے کیسے!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی شہر لاس اینجلس میں 89 ویں آسکر ایوارڈز کی تقسیم میں اس وقت غلط فہمی پھیل گئی جب لا لا لینڈ کی ٹیم ایوارڈ لینے کے لیے سٹیج پر پہنچ گئی کیونکہ فے ڈنوے نے غلطی سے 'مون لائٹ' کی جگہ ’لا لا لینڈ‘ کو بہترین فلم قرار دے دیا، تاہم بعد میں ان کی غلطی کی تصحیح کر دی گئی۔ فے ڈنوے اپنی تقریر کے وسط میں تھے جب اس غلطی کا پتہ چلا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق ڈنوے کے شریک پیش کار وارن بیٹی کو غلط لفافہ تھما دیا گیا تھا جس کے اندر ’ایما سٹون، لا لا لینڈ‘ کا کارڈ پڑا ہوا تھا۔ ایما سٹون نے کہا: ’یہ آسکرز کا سب سے پاگل پن والا لمحہ ہے؟ یہ تاریخ کا حصہ بن جائے گا۔‘

’مون لائٹ‘ کے ہدایت کار بیری جینکنز نے کہا کہ ان کی زندگی پچھلے 20 سے 30 منٹ میں ڈرامائی طور پر تبدیل ہوئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں