.

ایران جنوبی افریقا سے جدید ترین میزائلوں کے حصول کے لیے سرگرم

کیپ ٹاؤن کی’یو این‘ سے اسلحہ کے لین دین پرپابندی ختم کرنے کی درخواست

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جنوبی افریقا کے ذرائع ابلاغ نےانکشاف کیا ہے کہ کیپ ٹاؤن حکومت نے حال ہی میں اقوام متحدہ کو ایک مکتوب ارسال کیا ہے جس میں عالمی ادارے سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ ایران کے ساتھ اسلحہ کے لین دین پر عاید پابندیاں اٹھائے تاکہ جنوبی افریقا ایران کو زمین سے فضاء میں مار کرنے والے جدید ترین میزائل فروخت کرسکے۔

جنوبی افریقا کے اخبار’رابرٹ‘ نے اتوار کی اشاعت میں شامل ایک خبر میں بتایا ہے کہ حکومت ایران کے ساتھ تہران کی خواہش کے مطابق زمین سے فضاء میں مار کرنے والے ’اومکونٹو‘ طرز کے میزائل فروخت کرنے کی ڈیل کی خواہاں ہے۔

ذرائع ابلاغ کے مطابق ’اومکونٹو‘ نامی میزائل جنوبی افریقا کی میزائل سیریز میں جدید ترین میزائل ہیں جو ہرطرح کے موسمی حالات میں استعمال کیے جاسکتے ہیں۔ یہ میزائل 23 کلو گرام وزنی وار ہیڈ لے جانے کی بھی صلاحیت رکھتے ہیں۔

اخباری رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ جنوبی افریقا ایران کو ایک ارب 50 کروڑ رند کے بدلے کم فاصلے تک زمین سے فضاء میں مار کرنے والے میزائل فروخت کرنا چاہتا ہے۔ امریکی کرنسی میں اس سودے کی مالیت 18 کروڑ ڈالر ہے۔

’رابورٹ‘ کے مطابق اگر کیپ ٹاؤن حکومت اگر مذکورہ ڈیل میں کامیاب ہوجاتی ہے تو یہ ’اومکونٹو‘ میزائلوں کی فروخت کی سب سے بڑی ڈیل ہوگی۔

اخبار نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ دونوں ملکوں کے درمیان میزائلوں کی گذشتہ برس دسمبرمیں طے پائے معاہدے پر عمل درآمد کا حصہ ہے۔