.

سعودی عرب اور سوڈان کی مشترکہ فوجی مشقیں اختتام پذیر

فوجی مشقیں مشترکہ چیلنجز سے نمٹنے کی تیاری ہے: صدر البشیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب اور سوڈان کی فضائیہ کی گذشتہ دو ہفتے تک جاری رہنے والی مشترکہ فوجی مشقیں’نیل کی ڈھال‘ گذشتہ روز ختم ہو گئیں۔ فوجی مشقوں کی اختتامی تقریب میں سوڈان کے صدر محمد عمر البشیر اور سعودی حکام بھی موجود تھے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سوڈان کے ’مروی‘ ایئر بیس پر ہونے والی مشقوں میں سعودی عرب کے ’ایف 15‘ ٹائیفون اور ’ہاک‘ نامی نو طیاروں نے حصہ لیا۔ جب کہ جنگی مشقوں کے دوران سوڈان کے میگ 29،سوخوی 52، سوخوی 42،’می 17‘ اور راڈار بریگیڈ کے سپاہیوں نے حصہ لیا۔

سعودی عرب اور سوڈان کی مشترکہ فضائی مشقوں کا مقصد دونوں ملکوں کی فضائی جنگی صلاحیت کو بہتر بنانا۔ ایک دوسرے کی جنگی صلاحیتوں سے استفادہ کرنا، مشترکہ جنگی مقاصد اور دفاع کے شعبوں میں باہمی تعاون کو فروغ دینا اور آپریشنل کارروائیوں کے لیے فوج کے پیشہ وارانہ صلاحیتوں میں اضافہ کرنا تھا۔

’نیل کی ڈھال‘ فوجی مشقوں کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سوڈان کے صدر محمد عمر البشیر نے تمام عرب ممالک اور اقوام میں اتحاد واتفاق کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ عرب خطے کو درپیش امن وامان کے چیلنجز سے نمٹنے کے لیے تمام عرب اقوام کا مشترکہ حکمت عملی اختیار کرنا وقت کی ضرورت ہے۔

مشترکہ فوجی مشقوں کے ذریعے ہم اپنے مشترکہ دشمن کو یہ پیغام دیتے ہیں کہ دشمن اپنی سازشوں میں کامیاب نہیں ہوسکتا۔ فوج اور سیکیورٹی سے متعلق دیگر تمام شعبوں میں باہمی تعاون سے عرب ممالک کی دفاعی صلاحیتوں میں غیرمعمولی اضافہ ہوتا ہے اور ایک دوسرے کی افواج کی پیشہ وارانہ قابلیت سے بھرپور طریقے سے استفادے کا موقع ملتا ہے۔

انہوں نے سعودی مسلح افواج کی پیشہ وارانہ صلاحیت کی تعریف کرتے ہوئے سعودی فورسز کو حرمین شریفین کی محافظ فورس قرار دیا۔ صدر البشیر نے سوڈانی فوج کی پیشہ وارانہ صلاحیتوں کو بھی سراہا اور کہا کہ خرطوم ریاض کے ساتھ مل کر عرب خطے میں امن وامان اور سیکیورٹی کے حوالے سے درپیش چیلنجز سے نمٹنے کے لیے محوری کردار ادا کر سکتا ہے۔

اپنی گفتگو کے اختتام پر صدر البشیر نے مشترکہ فوجی مشقوں’نیل کی ڈھال‘ کی کامیابی پر سعودی عرب کو بھی مبارک باد پیش کی۔

مشترکہ فوجی مشقوں کی اختتامی تقریب میں سعودی عرب کی جانب سے سعودیہ فضائیہ کے سربراہ میجر جنرل محمد بن صالح العتیبی نے نمائندگی کی۔ انہوں نے کہا کہ سوڈان اور سعودی عرب کی مسلح افواج کی مشترکہ مشقوں کے دوران یقین، اعتماد اور حد درجہ معنوی احساسات کے ساتھ ساتھ بھرپور پیشہ وارانہ صلاحیتوں کا مظاہرہ کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ مشترکہ فوجی مشقوں کا مقصد دونوں ملکوں کی فضائیہ کی پیشہ وارانہ صلاحیتوں کو بہتر بنانا اور مل کر مشترکہ چیلنجز سے نمٹنے کے لیے تیاری کرنا تھا۔