.

امریکا۔روس کے باہمی تعلقات بدترین دور سے گذر رہے ہیں: لاوروف

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روسی وزیر خارجہ سرگی لاوروف نے اعتراف کیا ہے کہ ان کے ملک اور امریکا کے درمیان باہمی تعلقات تاریخ کے بدترین دور سے گذر رہے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق منگل کے روز ماسکو میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خارجہ لاوروف نے کہا کہ سرد جنگ کے بعد امریکا اور روس ایک بار پھر بدترین دور سے گذر رہے ہیں تاہم انہوں نے امید ظاہر کی امریکی وزیرخارجہ ریکس ٹیلرسن کا دورہ ماسکو دو طرفہ کشیدگی کو کم کرنے میں مددگار ہوگا۔

روسی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی وزیر خارجہ کے دورہ روس سے کافی امیدیں وابستہ ہیں اور اس دورے سے دونوں ملکوں کے درمیان شام کے تنازع پر پائی جانے والی کشیدگی کو کم کرنے میں مدد ملے گی۔ روسی وزارت خارجہ نے شمالی کوریا کے حوالے سے بھی تشویش کا اظہار کیا ہے۔

خیال رہے کہ امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹیلرسن آج بدھ کو ماسکو میں اپنے روسی ہم منصب سرگئی لاوروف سے ملاقات کریں گے۔

گذشتہ روز روسی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا تھا کہ امریکا کی جانب سے شمالی کوریا کے خلاف کسی قسم کی یک طرفہ کارروائی روس کے لیے تشویش کا باعث ہوگی۔