.

جرمنی کی فٹ بال ٹیم کی بس میں تین بم دھماکے، کھلاڑی زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جرمنی میں چیمپئنز لیگ کے ایک میچ میں حصہ لینے کے لیے جانے والی ’بورسيا ڈورٹمنڈ‘ فٹ بال ٹیم کی بس میں دھماکے سے کم از کم ایک کھلاڑی زخمی ہوا ہے۔ زخمی ہونے والے کھلاڑی مارک بارٹرا کو ہسپتال لے منتقل کیا گیا ہے۔

مقامی پولیس کے ترجمان گورنا فورٹمن نے بتایا کہ کھلاڑیوں سے بھری بس جب ہوٹل سے اسٹیڈیم کی طرف روانہ ہوئی اس میں یکے بعد دیگرے تین دھماکے ہوئے.

دھماکوں سے بس کے شیشے ٹوٹ گئے ہیں اور اس میں موجود کھلاڑی سخت خوف و ہراس کا بھی شکار ہوئے۔ اطلاعات کے مطابق آگ بجھانے والے عملہ بھی موقعے پر پہنچ گیا تھا۔

بعد ازاں پولیس کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ حکام اس واقعے کی تحقیقات کررہے ہیں۔ تاہم یہ کہنا قبل از وقت ہے کہ آیا یہ کوئی دہشت گردی کی منظم کوشش تھی یا نہیں۔ تاہم بس میں ہونے والے دھماکے شدید نوعیت کے تھے۔ پولیس کے مطابق بم سڑک کے کنارے لگے پودوں کے درمیان نصب کیے تھے جو بس کے گذرتے ہی پھٹتے چلے گئے۔

ٹیم کی جانب سے جرمن زبان میں کیے گئے ٹویٹس کے مطابق کوئی اور کھلاڑی زخمی نہیں ہوا ہے۔

ٹویٹس میں کہا گیا ہے کہ اسٹیڈیم کے ارد گرد کوئی خطرہ نہیں ہے۔

موناکو کے خلاف ہونے والا پہلے سے مقرر کردہ میچ کو منسوخ کر دیا گیا ہے۔ اب یہ میچ بدھ کو کھیلا جائے گا۔

جائے وقوعہ سے حاصل ہونے والی تصاویر میں دیکھا جا سکتا ہے کہ گاڑی کی کھڑکی کے شیشے ٹوٹے ہوئے ہیں۔ پولیس کا کہنا ہے کہ دھماکے کی وجوہات تاحال واضح ہیں تاہم انھوں نے کہا کے سٹیڈیم میں موجود شائقین کو کوئی خطرہ نہیں ہے۔

زخمی ہونے والے 26 سالہ فٹ بالر پارٹرا نے گذشتہ برس جرمن ٹیم میں اسپین کے بارسلونا سے واپسی پر 8.48 ملین ڈالر کے عوض شمولیت اختیار کی تھی۔ وہ اس سے قبل 12 عالمی مقابلوں میں حصہ لے چکا ہے۔