.

سعودی عرب : بین الاقوامی صکوک کے 25 ارب ڈالرز مالیت کے آرڈر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے جاری کردہ اسلامی صکوک کا بین الاقوامی سطح پر مثبت رد عمل سامنے آیا ہے اور اس کی فروخت کے لیے بدھ کے روز 25 ارب ڈالرز سے زیادہ مالیت کے آرڈر بُک ہوگئے ہیں۔

سعودی عرب عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی کے پیش نظر اپنے بجٹ خسارے کو پورا کرنے کے لیے آمدن کے ذرائع کو متنوع بنا رہا ہے اور بین الاقوامی سطح پر فنڈز اکٹھا کرنے کے لیے صکوک فروخت کررہا ہے۔

سعودی عرب نے اکتوبر 2016ء میں ساڑھے سترہ ارب ڈالرز مالیت کا روایتی بانڈ جاری کیا تھا اور اب اس نے اسلامی ڈالرز بانڈ کو جاری کیا ہے۔یہ اب تک جاری کیے جانے والے صکوک میں سے سب سے بڑا بانڈ ہے۔

اس صکوک کی منگل کے روز جاری کردہ قیمت پانچ سال کے لیے 115 اساسی نقاط ( بیسس پوائنٹس بی پی ایس) اور دس سال کے لیے 155 بی پی ایس مقرر کی گئی ہے۔بی پی ایس کی یہ شرح دراصل ان صکوک پر منافع کی شرح ہے اور یہ سعودی عرب کے گذشتہ سال اکتوبر میں جاری کردہ روایتی بانڈز سے 20 بی پی ایس زیادہ ہے۔ یہ بانڈ 2021ء اور 2026ء میں پختہ (میچور) ہوں گے۔

سعودی عرب کے جاری کردہ صکوک کے لیے سٹی بنک ، ایچ ایس بی سی اور جے پی مورگن عالمی رابطہ کار کے طور پر شراکت دار ہیں۔ان کے علاوہ بی این پی پیری بس ،ڈوئچے بنک اور این سی بی کیپٹل ان کے مشترکہ مینجرز ہیں اور وہی ان کی بکنگ کررہے ہیں۔