.

شاہ عبدالعزیز نے ایک صدی قبل ’ارامکو‘ بارے کیا کہا تھا؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

آج سے ایک صدی پیشتر سعودی عرب کے بانی فرمانروا شاہ عبدالعزیز آل سعود نے سعودی عرب کے سرمایہ کاروں کو سرکاری تیل کمپنی ’ارامکو‘ میں زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاری کی ترغیب دی تھی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق حال ہی میں ’العربیہ‘ کو دیئے ایک انٹرویو میں بھی نائب ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے شاہ عبدالعزیز کی اس تاکید کی طرف اشارہ کیا تھا جس میں انہوں نے کہا تھا کہ سعودی شہری تیل کمپنی ارامکو میں زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاریں اور اس کے حصص خریدیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کو شاہ عبدالعزیز مرحوم کی جانب سے بریدہ کے گورنر شہزادہ عبدالعزیز بن مساعد کے نام لکھا وہ مکتوب بھی ملا ہے جس میں 96 برس قبل انہیں کہا تھا کہ وہ ’ارامکو‘ میں شہریوں کی سرمایہ کاری کے لیے اقدامات کریں۔ اس مکتوب پر 28/1/1342 کی تاریخ درج ہے۔ اس مکتوب میں شاہ عبدالعزیز مرحوم نے سعودی شہریوں سے کہا تھا کہ وہ ارامکو میں حسب توفیق سرمایہ کریں اور اس کے حصص خریدیں۔

یہ وہ دور تھا جب سعودی عرب نے زمین میں تیل کی تلاش کرنے والی عالمی کمپنیوں کے ساتھ معاہدے شروع کیے تھے۔ سعودی عرب کی طرف سے کئی غیرملکی کمپنیوں کو بھی تیل نکالنے کے پرمٹ جاری کیے گئے تھے۔ شاہ عبدالعزیز کا کہنا تھا کہ ’ارامکو‘ کے 60 ہزار حصص سعودی شہریوں کے لیے مختص ہیں۔ یہ ان کے فایدے کے لیے رکھےگئے ہیں۔ یہ موقع باربار نہیں آئے گا۔ ان کی اس ترغیب کے بعد بڑی تعداد میں مقامی شہریوں اور دوسرے عرب ممالک کے لوگوں نے ارامکو میں حصص خرید کیے تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ شہریوں پر منحصر ہے کہ آیا وہ تیل کمپنی میں کتنی سرمایہ کاری کرسکتے ہیں۔ وہ ایک حصص خرید سکتے ہیں، 10 یا ایک سو خرید سکتے ہیں۔