.

یمنی صدر کا یو این ایلچی سے امن مذاکرات کی بحالی پر تبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمنی صدر عبد ربہ منصور ہادی سے سعودی دارالحکومت الریاض میں اقوام متحدہ کے ایلچی اسماعیل ولد الشیخ احمد نے ملاقات کی ہے اور ان سے حوثی ملیشیا کے ساتھ امن مذاکرات کی بحالی کے بارے میں تبادلہ خیال کیا ہے۔

عالمی ایلچی الریاض میں سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد کے حکام سے بھی ملاقات کرنے والے تھے۔ وہ ان سے یمن میں جنگ بندی کے بارے میں بات چیت کریں گے۔

واضح رہے کہ اقوام متحدہ کی ثالثی اور نگرانی میں یمنی حکومت اور حوثی ملیشیا کے درمیان ہونے والے امن مذاکرات جون 2016ء سے منقطع چلے آرہے ہیں۔تب دونوں فریقوں کے درمیان بحران کے خاتمے کے لیے بات چیت میں کوئی نمایاں پیش رفت نہیں ہوسکی تھی۔

دریں اثناء سعودی فورسز نے یمن کی سرحد کے ساتھ واقع شہر جازان کے نزدیک حوثی ملیشیا کے خلاف جمعرات کی صبح لڑائی ختم کردی ہے۔

العربیہ نیوز چینل کے نمائندے نے اطلاع دی ہےکہ سعودی فورسز نے جازان کے دو دیہات الدفینہ اور القرن کے نزدیک حوثیوں کا ایک بڑا حملہ ناکام بنا دیا تھا۔عسکری ذرائع نے بتایا ہے کہ اس محاذ پر حوثیوں کے خلاف دو گھنٹے تک لڑائی جاری رہی تھی اور اس میں کم سے کم چالیس حوثی جنگجو ہلاک ہوگئے ہیں۔