.

سعودی امریکی سربراہ ملاقات سے عالمی امن مستحکم ہو گا: شاہ سلمان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے پیر کے روز باور کرایا ہے کہ سعودی امریکی سربراہ اجلاس سے عالمی تعلقات، امن اور استحکام مضبوط ہوگا۔ سعودی سرکاری خبر رساں ایجنسی SPA کے مطابق وہ جدہ کے قصرِ سلام میں کابینہ کے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔ خادم حرمین شریفین کا کہنا تھا کہ یہ ملاقات انتہا پسندی کا مقابلہ کرنے اور رواداری کو پھیلانے کے لیے شراکت داری قائم کرے گی۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ خطے میں اپنے آئندہ دورے کے دوران مئی کے تیسرے ہفتے میں سعودی عرب پہنچیں گے۔

کابینہ کے اجلاس میں شاہ سلمان نے کہا کہ 20 مئی کو مقررہ سعودی امریکی سربراہ ملاقات مختلف شعبوں میں دونوں ملکوں کے درمیان تزویراتی تعلقات کو مضبوط بنانے اور علاقائی اور بین الاقوامی سطح پر مختلف معاملات میں تعاون کو بڑھانے میں اہم کردار ادا کرے گی.. جس سے عالمی امن کو استحکام حاصل ہو گا۔

خادم حرمین شریفین نے اس امید کا بھی اظہار کیا کہ خلیجی امریکی سربراہ اجلاس کے نتیجے میں تعلقات کو سپورٹ ملے گی اور خطے میں امن و سلامتی کی صورت حال بہتر بنانے کے حوالے سے مشترکہ توقعات پوری ہونے کے امکانات میں اضافہ ہوگا۔

سعودی فرماں روا کے مطابق عرب اسلامی امریکی سربراہ اجلاس کا انعقاد دنیا کو درپیش چیلنجوں اور نازک حالات کے بیچ منعقد ہو رہا ہے۔ انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ یہ تاریخی سربراہ اجلاس عوام کے حال اور مستقبل کے لیے ایک بڑی خدمت ثابت ہوگا.. جس میں انتہا پسندی اور دہشت گردی کا مقابلہ کرنے، رواداری اور مشترکہ بقاء کی اقدار پھیلانے اور امن و استحکام کو مضبوط بنانے کے واسطے نئی شراکت داری کی بنیاد پڑے گی۔