.

یمنی فوج کی عرب اتحاد کی فضائی مدد سے المخا کے شمال کی جانب پیش قدمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن کی سرکاری فوج نے مغربی شہر المخا کے شمال میں واقع متعدد مقامات پر دوبارہ کنٹرول حاصل کر لیا ہے اور وہاں سے حوثی باغیوں اور ان کے اتحادیوں کو لڑائی کے بعد پسپا کردیا ہے۔

یمنی فوج کے ایک ذریعے نے العربیہ کو بتایا ہے کہ سرکاری فورسز نے المخا شہر کے شمال میں واقع علاقے قدیحہ اور پانچ فارموں پر دوبارہ قبضہ کر لیا ہے۔انھیں سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد کی فضائی مدد حاصل تھی اور لڑاکا طیاروں نے حوثی باغیوں کے ٹھکانوں پر بمباری کی ہے۔

اس عسکری ذریعے نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرنے کی شرط پر مزید بتایا ہے کہ حوثیوں اور سابق صدر علی عبداللہ صالح کی وفادار فورسز نے زہری اور اس کے نواحی علاقے میں سرکاری فورسز پر دھاوا بولا تھا۔اس کے جواب میں سرکاری فورسز نے کارروائی کی ہے۔

اس علاقے میں اتحادی لڑاکا طیاروں نے مختلف جگہوں پر دس سے زیادہ فضائی حملے کیے ہیں۔ان میں حوثی ملیشیا اور علی صالح کی وفادار فورسز کے متعدد جنگجو ہلاک ہو گئے ہیں اور ان کی فوجی مشینری اور آلات تباہ کردیے گئے ہیں۔

المخا شہر اور اس کی بندرگاہ پر صدر عبد ربہ منصور ہادی کی وفادار فورسز کا 23 جنوری سے کنٹرول ہے اور وہ تب سے اس علاقے میں حوثی باغیوں کے خلاف کارروائی کررہی ہیں۔

درایں اثناء اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی برائے یمن اسماعیل ولد الشیخ احمد کا کہنا ہے کہ وہ رمضان سے قبل جنگ زدہ ملک میں فریقین کے درمیان جنگ بندی کے لیے سرتوڑ کوششیں کررہے ہیں۔