.

صدر ڈونلڈ ٹرمپ سعودی عرب کے تاریخی دورے پر روانہ

ڈونلڈ ٹرمپ اور عالمی رہ نماؤں کے والہانہ استقبال کی تیاریاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کل جمعہ کی شام سعودی عرب کے تاریخی دورے پر روانہ ہو گئے ہیں جہاں وہ آج ہفتے کے روز ریاض میں تین اہم سربراہ کانفرنسوں میں شرکت کریں گے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب میں سرکاری اور عوامی سطح پر صدر ٹرمپ اور ان کے ہمراہ آنے والے وفد کے والہانہ استقبال کے لیے تمام انتظامات مکمل کرلیے ہیں۔ٹرمپ نہ صرف سعودی قیادت سے ملاقاتیں کریں گے بلکہ عرب اور مسلمان ملکوں کی قیادت سے بھی ملاقات کریں گے۔

سعودی عرب کی جانب سے امریکی صدر کے تاریخی دورے کے موقع پر خلیجی ممالک کا اور مسلمان ملکوں کے الگ الگ اجلاس بھی بلائے ہیں۔ ٹرمپ سعودی قیادت کے ساتھ ون آن ون ملاقاتوں کے ساتھ ساتھ خلیجی اور مسلمان ملکوں کی سربراہ کانفرنس میں بھی شرکت کریں گے،

ریاض حکومت کی طرف سے امریکی صدر کے دورے کو کامیاب اور نتیجہ خیز بنانے کے لیے ’عزم ہمیں مجتمع‘ کررہا ہے کے عنوان سے تین سربراہ کانفرنسوں کا اہتمام کیا گیا ہے جہاں صدر ٹرمپ اپنے پہلے غیر ملکی دورے کے دوران خطاب کریں گے۔

سعودی قیادت کی جانب سے تینوں کانفرنسوں میں امن عالم، اقتصادی شراکت، سیاسی اور ثقافتی تعاون کے فروغ کی پالیسی اپنائی گئی ہے۔

امریکی وزیرخارجہ ریکس ٹیلرسن نے کہا ہے کہ ریاض کانفرنس میں مشرق وسطیٰ، وسطی ایشیا او افریقی ملکوں کی قیادت شرکت کرے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ عالمی سطح پر امریکا کے بارے میں یہ تاثر ہے کہ امریکا اتحادی ممالک کے مسائل کے حل میں لاپرواہی کا مظاہرہ کررہا ہے۔ ہم اس تاثر کو ختم کرنا چاہتے ہیں۔ ہم امریکا اور پوری دنیا کے درمیان نئے خطوط پر تعلقات استوار کرنا چاہتے ہیں۔ صدر ٹرمپ کے پہلے غیر ملکی دورے سے بہت سی توقعات وابستہ ہیں اور ہمیں امید ہے کہ بات چیت میں ہم اپنے مقاصد حاصل کرنے میں کامیاب رہیں گے۔

واشنگٹن کا یہ بھی کہنا ہے کہ ریاض کی میزبانی میں ہونے والی تین بین الاقوامی نوعیت کی سربراہ کانفرنسوں میں صدر ٹرمپ کی شرکت اس بات کا اشارہ ہے کہ امریکا کے عالمی کردار کی بحالی کا وقت آ گیا ہے۔

ٹیلرسن کا کہنا تھا کہ صدر ٹرمپ کے دورے کا بنیادی مقصد دنیا کو یہ پیغام دینا ہے کہ عالمی تنازعات اور چیلنجز کے حل کے لیے امریکا اپنا قائدانہ اور اعتدال پسندانہ کردار ادا کرنے کی طرف پلٹ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکا اور اس کے اتحادیوں کے چیلنجز مشترک ہیں۔

خیال رہے کہ امریکی صدر اعلیٰ اختیاراتی وفد کے ہمراہ آج سعودی عرب پہنچ رہے ہیں۔ وہ سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز سمیت سعودی عرب کی قیادت سے ملاقاتیں کریں گے۔ اس کے علاوہ ٹرمپ ریاض میں ہونے والے خلیجی سربراہ اجلاس اور مسلمان ملکوں کی سربراہ کانفرنس سے بھی خطاب کریں گے۔