.

برطانیہ: بکنگھم پیلس کے سامنے چاقو سے مسلح شخص گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانوی میں پولیس نے بدھ کے روز بکنگھم پیلس کے سامنے ایک شخص کو گرفتار کر لیا جس کے پاس چاقو تھا۔ یہ واقعہ برطانوی ملکہ الزبتھ کے گزرنے سے کچھ دیر قبل پیش آیا۔

برطانوی اخبار " ڈیلی ایکسپریس" کے مطابق گرفتاری کی کارروائی کی تصاویر میں ایک شخص زمین پر لیٹا نظر آ رہا ہے جب کہ پولیس افسران اس کی تلاشی لے رہے ہیں۔

مذکورہ شخص کی گرفتاری مانچسٹر شہر میں موسیقی کے ایک کنسرٹ میں ہونے والے دھماکے کے تقریبا 48 گھنٹوں کے بعد عمل میں آئی۔ اس خودکش حملے میں 22 افراد ہلاک اور 59 زخمی ہو گئے تھے۔

برطانوی حکام نے منگل کے روز اعلان کیا تھا کہ مانچسٹر میں حملہ کرنے والے شخص کا نام سلمان عبیدی ہے جو ایک 22 سالہ لیبیائی نژاد برطانوی شہری ہے۔ داعشی خود کش حملہ آور لندن شہر کا رہنے والا تھا۔ اس نے حملے کی کارروائی کے لیے برطانوی دارالحکومت وکٹوریا اسٹیشن سے ٹرین کے ذریعے مانچسٹر کا سفر کیا۔

عبیدی کی 50 سالہ ماں کا نام سامیہ اور والد کا رمضان عبیدی ہے۔ رمضان عبیدی لیبیا میں سابق سکیورٹی افسر رہ چکا ہے۔ حملہ آور سلمان کے والدین کا تعلق لیبیا کے مغرب میں بسنے والے قبیلے العبیدات سے ہے۔ سلمان کے والد نے معمر قذافی کی حکومت کی پکڑ سے بچنے کے لیے لندن کی راہ فرار اختیار کی تھی۔ بعد ازاں وہ مانچسٹر کے جنوب میں واقع علاقے ویلوفیلڈ منتقل ہو گیا۔ یہاں اس نے 10 برس گزارے جس کے دوران سلمان ، اس کے دو بھائی اور ایک بہن کی پیدائش ہوئی۔

داعش تنظیم نے منگل کے روز ایک بیان میں پیر کو مانچسٹر میں امریکی گلوکارہ آریانا گرینڈے کے کنسرٹ میں دھماکے کی ذمے داری قبول کی تھی۔