.

اپریل میں شامیوں اور عراقیوں کو کتنے امریکی ویزے جاری ہوئے ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے رواں سال اپریل کے مہینے میں اُن 7 ممالک کے شہریوں کو جن پر صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے عارضی طور پر امریکا میں داخلے پر پابندی عائد کی تھی.. گزشتہ برس کے ماہانہ اوسط کی نسبت 50% کم تعداد میں ویزے جاری کیے.. اس بات کا اعلان ایک برطانوی خبر رساں ایجنسی نے جمعرات کے روز امریکی حکومت کی جانب سے جاری ابتدائی معلومات کے تجزیے کے بعد کیا۔

اسی طرح امریکا نے اپریل میں دنیا کے تمام ممالک کے غیر مہاجرین شہریوں کو 2016 کے ماہانہ اوسط کی نسبت 15% کم ویزے جاری کیے۔

امریکی وزارت خارجہ کی جانب سے گزشتہ ماہ جاری معلومات کے مطابق امریکا نے رواں برس مارچ میں پابندی کا شکار ممالک ایران ، لیبیا ، صومالیہ ، سوڈان ، شام اور یمن کے علاوہ عراق (جس پر بعد ازاں پابندی ہٹا لی گئی تھی) کے شہریوں کو گزشتہ برس کے ماہانہ اوسط سے 40% کم تعداد میں ویزے جاری کیے۔

مذکورہ 7 ممالک کے غیر مہاجر شہریوں کو اپریل 2017 میں 2800 ویزے جاری کیے گئے جب کہ اپریل 2016 میں یہ تعداد 5700 تھی۔ واضح رہے کہ 2014 اور 2015 کے اپریل کے مہینوں میں یہ تعداد 6 ہزار سے بھی زیادہ رہی۔ خیال رہے کہ گزشتہ برسوں کی معلومات ماہانہ نہیں بلکہ پورے مالی سال کی بنیاد پر سامنے آنے والی تعداد پر مبنی اوسط ہے۔

امریکی وزارت خارجہ کی جانب سے دنیا بھر کے ممالک کو جاری کیے جانے والے ویزوں کی ماہانہ تعداد کا انکشاف کرنے کی ہدایت صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے دی تھی۔

ایگزیکٹو آرڈرز

ڈونلڈ ٹرمپ نے رواں سال 27 جنوری کو ایک ایگزیکٹو آرڈر پر دستخط کیے تھے جس کے تحت سات مسلم اکثریتی ممالک کے شہریوں پر 90 روز کے لیے امریکا میں داخلے پر پابندی عائد کر دی گئی۔ ٹرمپ کے مطابق اس اقدام کا مقصد امریکا کو دہشت گرد حملوں سے مزید محفوظ بنانا ہے۔ امریکا کی وفاقی عدالتوں کی جانب سے اس آرڈر پر عمل درامد معطل کر دیے جانے کے بعد ٹرمپ انتظامیہ نے عراق کو زیرِ پابندی ممالک کی فہرست سے خارج کر دیا۔ عدالتوں نے دوسرے آرڈر کے بعض حصوں پر بھی عمل درامد رکوا دیا تھا۔

اگرچہ پابندی کا نشانہ بننے والے سات ممالک کے لیے ویزوں کی تعداد میں کمی دیکھنے میں آئی تاہم عراقیوں نے اپریل میں 349 مہاجر ویزے حاصل کیے جب کہ 2016 میں عراقی مہاجرین کے اوسط ماہانہ ویزوں کی تعداد 305 تھی۔ اسی طرح اپریل 2017 میں شامی شہریوں نے ہجرت کے لیے 268 ویزے حاصل کیے جب کہ گزشتہ برس شامی باشندوں کے لیے مہاجر ویزوں کی ماہانہ اوسط تعداد 219 تھی۔ ٹرمپ کے ایگزیکٹو آرڈ میں پابندی کا نشانہ بننے والے بقیہ تمام ممالک کے شہریوں کو 2016 کے اوسط ماہانہ مہاجر ویزوں کی نسبت رواں سال اپریل میں کم تعداد میں ویزے جاری ہوئے۔