کویت دوسال کے لیے سلامتی کونسل کا غیر مستقل رُکن منتخب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

خلیجی ریاست کویت کو گذشتہ روز سلامتی کونسل میں دو سال کے لیے غیر مستقل رکن کا درجہ دیا گیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق کویت کو غیر مستقل رکن کا درجہ دینے کے لیے سلامتی کونسل میں رائے شماری کی گئی۔ کویت کی اعزازی رکنیت کا آغاز جنوری 2018ء سے ہوگا۔

خبر رساں ادارے ’کونا‘ کے مطابق سلامتی کونسل میں کویت کو غیر مستقل رکنیت کے لیے گذشتہ روز رائے شماری کی گئی۔ رائے شماری میں 192 ممالک میں سے 188 کویت کی حمایت کی۔

اس موقع پر ایک پریس کانفرس سے خطاب کرتے ہوئے کویت وزیر خارجہ صباح خالد الصباح نے کہا کہ ’علاقائی بحرانوں کے سفارتی حل کے لیے ہمارے اوپر بھاری ذمہ داری عاید ہوئی ہے اور ہم اس ذمہ داری سے کما حقہ عہدہ برآ ہونے کی کوشش کریں گے‘۔ انہں نے کہا کہ ایران کے ساتھ بین الاقوامی اصولوں کی بنیاد پر مذاکرات کیے جاسکتے ہیں۔

اس موقع پر دیگر ممالک ساحل العاج، گینیا، پیرو اور پولینڈ کو بھی سلامتی کونسل کا دو سال کے لیے اعزازی رکن منتخب کیا گیا۔

خیال رہے کہ سلامتی کونسل کے پانچ مستقل ارکان امریکا، برطانیہ، فرانس، چین اور روس کو’ویٹو‘ پاور کا درجہ حاصل ہے۔ اس کے علاوہ سلامتی کونسل کے 10 غیر مستقل ارکان ہیں جن کا چناؤ دو سال کے لیے کیا جاتا ہے۔ دو سال کی مدت ختم ہونے کے بعد اس میں توسیع نہیں کی جاسکتی۔ ہرسال پانچ نئے غیر مستقل ارکان کا چناؤ عمل میں لایا جاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں