.

دہشت گردی کی نئی نوعیت کا سامنا ہے: برطانوی وزیراعظم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانوی وزیراعظم ٹریزا مے کا کہنا ہے کہ برطانیہ کو دہشت گرد کارروائیوں کے ایک نئے نمونے کا سامنا ہے۔ لندن حملے کے بعد اتوار کے روز وزیراعظم سکریٹریٹ کے سامنے ایک پریس کانفرنس کے دوران مے نے بتایا کہ سکیورٹی ایجنسیوں اور پولیس نے حالیہ ہفتوں کے دوران 5 حملوں کو ناکام بنایا۔

ٹریزا مے نے تصدیق کی کہ لندن حملے میں 7 افراد ہلاک ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس نے 8 منٹوں کے اندر اپنے رد عمل میں مشتبہ افراد کو موت کی نیند سلا دیا۔

انہوں نے واضح کیا کہ "محض عسکری کارروائیوں کے ذریعے دہشت گردی پر قابو نہیں پایا جا سکتا۔ ہمیں دہشت گرد نظریات کا مقابلہ کرنا ہوگا اور اس وقت انٹرنیٹ کے ذریعے ان نظریات کے خلاف جنگ کے لیے نئے قوانین کی ضرورت ہے"۔

برطانوی وزیر اعظم نے زور دے کر کہا کہ "نفرت اور شدت پسندی کا نظریہ اسلام کی تصویر مسخ کرنے کی کوشش ہے اور اس پر قابو پانا ہمارے سامنے سب سے بڑا چیلنج ہے"۔

ٹریزا مے کے مطابق انتخابی مہم کل سے دوبارہ شروع ہو گی اور عام انتخابات اپنے وقت پر منعقد ہوں گے۔