.

لندن حملے سے تعلق کا شبہہ ، خواتین سمیت 12 افراد گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانوی پولیس نے اتوار کے روز لندن میں 12 افراد کو گرفتار کر لیا۔ ان افراد کو ہفتے کی شب دارالحکومت میں ہونے والے حملے سے تعلق کے شبہے میں حراست میں لیا گیا ہے جس میں 7 افراد ہلاک اور 48 زخمی ہو گئے تھے۔
اس سلسلے میں جاری بیان میں بتایا گیا کہ "انسداد دہشت گردی یونٹ کے افسران نے اتوار 4 جون کو لندن کے مشرقی علاقے بارکِنگ سے 12 افراد کو حراست میں لے لیا گیا جن کا تعلق ہفتے کی شب لندن بِرج اور بورو مارکیٹ کے علاقے میں ہونے والے حملوں سے ہے۔ بارکِنگ کے علاقے میں کئی عمارتوں کی تلاشی کا سلسلہ جاری ہے"۔
ادھر موقع پر موجود معروف برطانوی خبر رساں ایجنسی کے کیمرہ مین نے بتایا ہے کہ پولیس بارکِنگ کے رہائشی فلیٹوں سے چار خواتین کو باہر لے کر آئی جنہوں نے اپنے چہرے ڈھانپ رکھے تھے۔ بعد ازاں ان خواتین کو گاڑی میں بٹھا کر پولیس روانہ ہو گئی۔
برطانوی پولیس نے ہفتے کے روز اُن تینوں افراد کو گولیاں مار کر ہلاک کر دیا تھا جنہوں نے لندن کے وسطی علاقے بورو مارکیٹ میں پیدل چلنے والوں پر چاقوؤں سے حملہ کیا۔ اس سے قبل مذکورہ افراد نے لندن بِرج پر ایک ویگن کے ذریعے دیگر کئی افراد کو کچل دیا تھا۔
لندن پولیس کی سربراہ کریسیڈا ڈیک کا کہنا ہے کہ زمینی طور پر اقدامات سخت کرنے کے لیے پولیس پہلی مرتبہ بعض علاقوں میں مسلح سکیورٹی اہل کاروں کو تعینات کرے گی۔
دوسری جانب برطانوی وزیر اعظم ٹریزا مے نے مطالبہ کیا ہے کہ انسداد دہشت گردی کی حکمت عملی تبدیل اور اس سے متعلق قوانین کو سخت کیا جائے۔